دہشت گردی کے معاملہ پر امریکہ کی پاکستان کو پھٹکار، لشکر طیبہ جیسے دہشت گرد گروپ کھلے عام چندہ اکٹھا کر رہے ہیں

واشنگٹن: امریکہ نے ایک بار پھر پاکستان کو سخت پھٹکار لگاتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ہندوستان اور افغانستان میں حملے کرنے والے دہشت گردوں کے خلاف کارروائی نہیں کر رہا ہے۔ امریکی وزارت خارجہ نے’ ‘کنٹری رپورٹس آن ٹیررزم2016‘ کی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان میں لشکر طیبہ جیسے دہشت گرد گروہ کھلے عام چندہ جمع کرتے ہیں۔دہشت گردوں سے لڑنے میں پاکستان امریکہ کا اب بھی اتحادی ہے، لیکن وہ ان دہشت گرد گروہوں کے خلاف کارروائی نہیں کرتا جو ہندوستان اور افغانستان میں حملے کرتے ہیں۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ سال ہی پاکستان کے اندر سے دہشت گرد گروہ حقانی نیٹ ورک نے افغانستان میں امریکی فوجیوں پر حملے کئے۔ لیکن پاکستان نے حقانی نیٹ ورک کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی۔ پاکستان نے لشکر طیبہ اور جیش محمد جیسے دہشت گرد گروپوں کے خلاف بھی کارروائی نہیں کی۔ یہ تمام دہشت پسند گروہ پاکستان کے اندر فعال رہے، دہشت گردوں کو تربیت دیتے رہے اور دہشت گردانہ سرگرمیوں کے لئے چندہ بھی جمع کرتے رہے، اس کے علاوہ دہشت گرد حافظ سعید اب بھی پاکستان میں ریلیوں سے خطاب کر رہا ہے۔
وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ پاکستان میں اقوام متحدہ کی طرف سے دہشت گرد قرار دئے گئے لوگوں اور تنظیموں کے ذریعہ چندہ جمع کرنے پر بھی کوئی ٹھوس قدم نہیں اٹھایا جا رہا ہے۔ پاکستان میں لشکر طیبہ ممنوع تو ہے، لیکن لشکر کی شاخ مانے جانے والی جماعت الدعویٰ اور فلاح انسانیت فاؤنڈیشن جیسی تنظیمیں کھلے عام چندہ جمع کرتی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pakistan not taking substantial action against terror groups us in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply