شام میں رواں سال کے پہلے نصف میں 5ہزار شہری ہلاک ہو چکے ہیں: ایک رپورٹ

دمشق:شام میں حقوق انسانی کے ایک نیٹ ورک نے اپنی تازہ ترین رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ شام میں جاری جنگ کے دوران رواں سال کے پہلے نصف میں پانچ ہزار شہری(غیر فوجی) ہلاک ہو چکے ہیں۔ شام میں دہشت گرد تنظیم داعش اورحکومت شام کی افواج اور امریکی اتحادکے حملوں میں مارے جانے والے شہریوں کے اعداد و شمار جاری کرتے ہوئے ہیومن رائیٹس نیٹ ورک کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ رواں سال کے پہلے چھ مہینوں کے دوران پانچ ہزار تین سو اکیاسی عام شہری ان حملوں کے نشانہ بن چکے ہیں۔
رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ رواں سال مارے جانے والے شہریوں میں600سے زائدبچے اور 724خواتین بھی شامل ہیں۔ رپورٹ کے مطابق امریکی اتحاد کے حملوں میں اب تک دو ہزار بہتر شہری ہلاک ہو چکے ہیں جن میں 318 بچے اور 245 خواتین شامل ہیں۔ دہشت گرد تنظیم داعش کی جانب سے عام شہریوں پر کئے جانے والے حملوں کے نتیجے میں 1008 عام شہری مارے جا چکے ہیں جن میں 291 بچے اور 283 خواتین بھی شامل ہیں۔ہلاک شدگان میں سے93اذیت رسانی کے باعث ہلاک ہوئے ہیں۔رپورٹ ریکارڈ کے مطابق کرد فورسز کے حملوں میں153افراد بشمول 31بچے اور 25خواتین شامل ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Over 5000 syrians killed in first half of 2017 says snhr in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags: , ,

Leave a Reply