روس میں کرپشن مخالف مظاہرہ،1500 گرفتار،اپوزیشن رہنما الیکسی کو جیل میں ڈال دیا گیا

ماسکو:روس کے دارالحکومت ماسکو میں اپوزیشن رہنما الیکسی ناوالنی کی پکار پر ماسکو اور سینٹ پیٹر برگ میں احتجاج کے دوران پولس نے 1500افراد کو گرفتار کر لیا۔ایک روسی این جی او نے بتایا کہ 823افراد کو ماسکو میں اور600سے زائد کو سینٹ پیٹرز برگ میں گرفتار کیا گیا۔ الیکسی ناوالنی کو 30روز کے لیے داخل زنداں کر دیا گیا۔واضح رہے کہ ملک میں بڑھتے کرپشن کے خلاف عوام احتجاج میں سڑکوں پر نکل آئی ہے۔ ماسکو کی ٹیورسکایا اسٹریٹ میں لوگوں کی بڑی تعداد جمع ہوئی جس کے بعد لوگوں نے حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ اس احتجاج کی کال اپوزیشن پارٹی کے لیڈر الیکسی نیوالنی نے دی تھی جنہوں نے نوجوانوں کے سوشل میڈیا کہ ذریعے اس احتجاج سے آگاہ کیا۔
ذرائع ابلاغ کے مطابق روس کے دارالحکومت ماسکو اور سینٹ پیٹرزبرگ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگ جمع ہوئے جس کے بعد حکومت نے پولیس کے ذریعے منتشر کرنے کی کوشش کی تاہم الیکسی نیوالنی سمیت تقریبا ایک ہزار لوگوں کو گرفتار کیا۔ جبکہ حکومت کی جانب سے چند مخصوص مقامات پر عوام کے جمع ہونے پر پابندی لگائی گئی ہے اور ساتھ ہی یونیورسٹیز کے طلبہ کو احتجاج میں شامل ہونے کی صورت میں یونیورسٹی سے نکالنے کی بھی دھمکی دی گئی۔پچھلے برس مارچ کے مہینے میں بھی روس میں بڑا احتجاج ہوا تھا تاہم اس کے بعد اب پھر سے لوگ بڑی تعداد میں حکومتی کرپشن کے خلاف جمع ہوئے ہیں اور اپنا احتجاج ریکارڈ کروایا۔الیکسی نیوالنی نے اگلے سال ہونے والی صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان بھی کر رکھا ہے اور اس وقت اپوزیشن پارٹی کے لیڈر بھی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Opposition leader alexei navalny jailed 1500 arrested after protests across russia in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply