شمالی کوریا کا ہوسانگ15-میزائل آسمان میں ساڑھے چار ہزار کلومیٹر اوپر تک گیا

واشنگٹن: شمالی کوریا نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے ایک نئے قسم کے بین بر اعظمی بالسٹک میزائل کا تجربہ کیا ہے۔جسے اب تک کا سب سے زیادہ خطرناک میزائل قرار دیا جارہا ہے۔اور یہ براعظم امریکہ کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔
شمالی کوریا کے حکومتی ابلاغی ذرائع نے یہ اعلان رات تین بجے صدر کم جونگ ان کی جانب سے ہوسانگ 15-میزائل داغے جانے کا حکم جاری کیے جانے کے ایک گھنٹے بعد کیا۔
میزائل داغے جانے کے بعد کم جونگ نے کہا کہہوسانگ 15-نام کا یہ میزائل آسمان میں 4475کلومیٹر اونچائی تک گیا جو کہ اس سے پہلے داغے گئے تمام میزائلوں سے زیادہ اونچائی تک گیاہے۔
وہ سمندر میں گرنے سے پہلے منٹ تک فضا میں تیرتا رہا۔شمالی کوریا کا یہ دعویٰ جاپان اور جنوبی کوریا کے دعوے سے میل کھاتا ہے۔اس کے ساتھ ہی کم نے کہا کہ اس میزائل تجربہ سے ملک کی ایٹمی طاقت کو مکمل کرنے کی تاریخی کاز پایہ تکمیل کو پہنچ گیا۔

Title: north koreans hwasong 15 misael soared 4475 kilometers 2800 miles in the sky | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply