ستمبر11حملوں میں سعودی عرب کا ہاتھ ہونے کا کوئی ثبوت نہیں: سی آئی اے سربراہ

واشنگٹن:سی آئی اے کے ڈائریکٹر جان برینان نے کہا ہے کہ اس بات کا کوئی ثبو ت نہیں ہے کہ ستمبر11کے حملوں میں سعودی حکومت یا سینیئر سعودی افسران نے مدد کی تھی۔ مسٹر برینن نے مزید کہا کہ 2001کے حملوں کی تحقیقاتی رپورٹ کے 28 صفحات پر، جو ابھی تک خفیہ ہے ، نظر ثانی کی گئی ہے۔
ان صفحات میں19ہائی جیکروں میں 15کے بارے میں کہا گیاتھا کہ وہ سعودی شہری ہیں۔صدر براک اوبامہ نے وعدہ کیا ہے کہ وہ ان 28صفحات یا رپورٹ کا کچھ حصہ عام کر دیں گے ۔اور توقع ہے کہ یہ رپورٹ اس مہینے عام کی جاسکتی ہے۔رپورٹ کا باقی حصہ دسمبر2002میں ہی جاری کیا جاچکا ہے۔
قبل ازیںمسٹر برینن نے کہا کہ 28صفحات میں حملہ آوروں کاسعودی عرب سے تعلق ہونے کے امکان کے حوالے سے ابتدائی معلومات مذکور ہیں۔لیکن حملوں کی دوباری تفتیش کے لیے تشکیل دیا گیا 9/11کمیشن کو آخر کار ایسی کوئی علامت نہیں ملی جس سے ان حملوں میں سعودی عرب کے ملوث ہونا ثابت ہوتا ہے۔
مسٹر برینن نے سعودی نیوز پورٹل العربیہ نیوز چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے مزید کہا کہ9/11کمیشن نے ان حملوں میں سعودی حکومت یا سعودی افسران کا ہاتھ ہونے کے الزامات کی مکمل تحقیقات کی۔
اور اس نتیجہ پر پہچا کہ ایسے کوئی شواہد نہیں ہیں جو اس امر کی نشاندہی کرتے ہوں کہ 9/11حملوں میں ایک ادارہ کے طور پرسعودی عرب کی حکومت یا انفرادی طور پرسعودی سینیئر افسران ملوث تھے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No proof of saudi govt involvement in sept 11 attacks says cia chief in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply