روسی کروز میزائلوں سے نمٹنے کے لیے امریکہ کے پاس کوئی دفاعی نظام نہیں: امریکی جنرل ہائیٹن

واشنگٹن: ایک اعلیٰ امریکی فوجی افسر جنرل جان ہائیٹن نے واضح طور پر کہا ہے کہ امریکہ اور اسکے اتحادیوں کے پاس حال ہی میں روس کے ذریعہ نصب کیے گئے زمینی کروز میزائل سے بچنے کا کوئی راستہ نہیں ہے اور انکے پاس ایسی کوئی ٹیکنالوجی موجود نہیں ہے جس کی مدد سے روس کے تیارکردہ کروز میزائل کو روکا جاسکے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق واشنگٹن میں ہونے والے سینیٹ آرمڈ سروس کمیٹی کے اجلاس میں امریکی جنرل جان ہائیٹن نے ارکان کو بتایا کہ امریکا اور اسکے اتحادیوں کے پاس روس کی جانب سے سرحدی علاقوں میں نصب کردہ روسی کروز میزائلوں کیلئے کوئی دفائی نظام موجود نہیں ہے۔
جس کے باعث انہیں کسی بھی مقام سے کئی بار داغا جاسکتا ہے جس کا دفاع کرنا ناممکن ہوگا۔ تاہم اگر ایک مقام پر ایک کروز داغا جائے تو اسکا دفاع کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یورپی ممالک کروز میزائلوں کی تنصیب کے حوالے سے خوفزدہ ہیں جو کہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کے لئے خطرے کی علامت ہے جس سے نمٹنے کے لئے بحیثیت قوم کوششیں کی جارہی ہیں۔ کہا جارہا ہے کہ روس سقوط سوویت یونین کی آگ میں اس قدر جھلس رہا ہے کہا کہ وہ بھی کسی بھی وقت اپنی اس انتقامی آگ کو بجھانے کے لیے انہی میزائلوںکا استعمال کر سکتا ہے۔
امریکہ بارہا روس پر الزام لگاتا رہا ہے کہ وہ خشکی پر کروز میزائل نظام نصب کر کے امریکہ روس اسلحہ کنٹرول معاہدہ 1987کی خلاف ورزی کا مرتکب ہو رہا ہے۔ امریکی فوج کی اسٹریٹیجک کمانڈ کے سربراہ جنرل جان ہائیٹنکا کہنا تھا کہ روس کی جانب سے لگاتار انٹرمیڈیٹ نیوکلئیر فورسز معاہدے کی خلاف ورزی کی جارہی ہے۔ روس کی جارحانہ پالیسی پر ہمارے تحفظات ہیں اور ماسکو کی جانب سے پیدا کردہ خطرات کو دیکھتے ہوئے ہمیں بھی کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No defense against multiple russian cruise missiles u s general in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply