ایران پاکستان تعلقات پر کسی تیسرے ملک کو اثر انداز نہ ہونے دینا چاہئے: ایرانی قومی سلامتی مشیر

ماسکو: ایران کے قومی سلامتی کے مشیر علی شمخانی نے کہا ہے کہ ایران اور پاکستان کو دو طرفہ تعلقات پر کسی تیسرے فریق کو اثر انداز نہیں ہونے دینا چاہیے۔ روس میں اعلیٰ سطحی بین الاقوامی سلامتی سربراہ اجلاس میں فرصت کے لمحات میں انہوں نے پاکستانی قومی سلامتی کے مشیر ناصر جنجوعہ سے ملاقات کی اور اس بات پر زور دیا کہ پاکستان اور ایران کے برادرانہ اور دوستانہ تعلقات پر کسی تیسرے ملک کو اثر انداز ہونے کی اجازت نہیں دی جانی چاہیئے۔
علی شمخانی نے چند دن پہلے پاکستانی بارڈر کے ساتھ دہشت گردی کے واقعہ میں شہید ہونے والے ایران سپاہیوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ مشترکہ بارڈر پر دہشت گرد گروہوں کو روکنا ازحد ضروری ہے۔ملاقات میں پاکستانی قومی سلامتی کے مشیر ناصر جنجوعہ نے ایرانی صدر حسن روحانی کے دوبارہ منتخب ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ کچھ دن پہلے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کے دورہ اسلام آباد سے دہشت گردی کے خلاف اقدامات کرنے لیے وقت کے تقاضہ کے عین مطابق ہم آہنگی حاصل ہوئی ہے۔ناصر جنجوعہ نے پاکستانی رہنماوں کے پختہ عزم کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ سیکیورٹی معاملات میں تعاون سے آئندہ ممکنہ دہشت گردانہ اقدامات سے بچنا ممکن ہو جائے گا۔

Title: no country should affect tehran islamabad ties iranian official | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply