امریکہ میں وکیل کی اندھادھند فائرنگ ،9زخمی

ہیوسٹن: امریکہ میں ٹیکساس ریاست کے ہیوسٹن شہر میں ایک بندوق بردار نے راہگیروں پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس میں کم از کم نو افراد زخمی ہو گئے۔ یہ بندوق بردار جوپولیس کی گولی سے ہلاک ہو گیا وکیل بتایا جاتا ہے۔
ہیوسٹن کے پولیس سربراہ مرتھا مونٹالوو نے کل صحافیوں سے کہا کہ فائرنگ کے بعد تین لوگوں کا ابتدائی علاج جائے حادثہ پر ہی کیا گیا جبکہ چھ دیگر کو اسپتال میں داخل کرایا گیا جن میں سے دو کی حالت نازک ہے۔ وفاقی تحقیقاتی ایجنسی نے کہا کہ اس فائرنگ سے ایسا کوئی اشارہ نہیں ملا ہے جس سے یہ پتہ چلے کہ گولی چلانے والے شخص کا کسی بنیاد پرست گروپ سے تعلق تھا۔
پولیس نے گولی چلانے والے شخص کی شناخت بتانے سے انکار کیا تاہم مقامی میڈیا نے کہا کہ جس سیاہ رنگ کی لگڑری پورش گاڑی سے گولیاں چلائی گئی وہ گاڑی ناتھن دیسائی کے نام پر رجسٹرڈ ہے۔ دیسائی کے سابق ساتھی کین میک ڈینیل نے کہا کہ وہ 1998 میں تلسا یونیورسٹی سے قانون کی ڈگری حاصل کی اور ایک کمپنی بنائی لیکن کمپنی چھ ماہ پہلے ہی بند ہو گئی۔
انہوں نے مقامی ٹیلی ویڑن سے کہا کہ فائرنگ کرنا دیسائی کے مزاج میں نہیں تھا۔ ہوسٹن کے میئر سالویسٹر ٹرنر نے صحافیوں سے کہا کہ اس واقعہ سے ایسا ظاہر ہوتا ہے کہ دیسائی کی کمپنی ٹھیک ڈھنگ سے نہ چل پانے کی وجہ ذہنی دباؤ کی وجہ سے اس نے فائرنگ کی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Nine hurt after disgruntled lawyer opens fire in houston in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply