افغانستان میں انتہا پسندوں اور سلامتی دستوں میں خونیں تصادم ، 22ہلاک

کابل: افغانستان کے مغربی صوبہ فراہ میں رات بھر چلنے والے خونیںتصادم میں کم از کم 8پولس اہلکار اور13حکومت مخالف مسلح انتہا پسند مارے گئے۔
یہ خونیں جھڑپ بالا بولوک ڈسٹرکٹ میں اس وقت ہوئی جب انتہااپسندوں کی ایک بھیڑ نے فوجی چوکیوں پر مربوط حملے شروع کر دیے۔ صوبائی گورنر کے ترجمان محمد ناصر مہری نے 9پولس اہلکاروں کی ہلاکت کی تصدیق کر دی۔
انہوں نے کہا کہافغان سیکورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں 13انتہا پسند بھی مارے گئے۔ حکومت مخالف مسلح جنگجو گروپوں بشمول طالبان باغیوں نے اس رپورٹ پر ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں کیاہے۔

Title: nine afghan policemen 13 militants killed in farah clash | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply