دوبارہ منتخب ہوتے ہی مغربی کنارے میں وادی اردن سمیت تمام مقبوضہ علاقوں کا الحاق کر لوں گا: وزیر اعظم اسرائیل نتن یاہو

یروشلم: اسرائیل کے وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ اگر وہ دوبارہ منتخب ہو گئے تو مقبوضہ مغربی کنارے میں وادی اردن کا الحاق کر لیں گے۔ مسٹر نتن یاہو نے ٹیلی ویژن سے راسٹ ٹیلی کاسٹ تقریر میں کہا کہ ایک مقام ہے جہاں انتخابات کے فوراً بعد ہم اسرائیلی خود مختاری کا نفاذ کر سکتے ہیں۔مجھے اگر آپ لوگوں کی اسرائیل کے شہریوں کی حمایت حاصل رہی اور ایسا کرنے کے لیے واضح مینڈیٹ دیا تو آج میں اپنے منصوبے کا اعلان کرتا ہوں کہ اسرائیل کی آئندہ حکومت کا اقتدار وادی اردن اور شمالی بحر مردار پر بھی ہوگا۔لیکن مسٹر یاہو نے کہا کہ ایسا کوئی بھی اقدام طویل عرصہ سے معرض التوا میں پڑے امریکی امن منصوبے کی اشاعت اور صدر ڈونالڈ ٹرمپ سے مشاورت سے پہلے نہیں کیا جائے گا۔ ایک سینیئر فلسطینی اہلکار حنان اشراوی نے کہا کہ وادی اردن کے الحاق کے عزم سے اسرائیل فلسطین امن کے تمام امکانات فوت ہو جائیں گے۔نتن یاہو نہ صرف دو ریاستی حل کو تباہ کر رہے ہیں بلکہ امن کے تمام مواقع بھی تباہ کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نتن یاہو اس زمین کے لوگوں کے بغیر ہتھیانا چاہتے ہیں اور وہاں رہائش پذیر لوگوں سے کہہ رہے ہیں کہ آپ لوگ یہان سے جانے کے لیے آزاد ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسرائیل میں جب بھی انتخابات ہوتے ہیں ہم اپنے حقوق اور اپنی سرزمین کی شکل میں اس کی قیمت چکاتے ہیں ۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Netanyahu vows to annex occupied territories if re elected in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.