برما میں حکومتی فوج اور باغیوں میں مسلح تصادم کے بعد تین ہزار لوگوں نے چین میں پناہ لی

بیجنگ:میانمار میں حکومت اور باغیوں کے درمیان سرحد پر جھڑپ کے بعد تین ہزار سے زائد لوگوں نے بھاگ کر چین میں پناہ لی ہے۔ حکومتی ابلاغی ذرائع کے مطابق تصادم کے بعد چین کی سرحد میں داخل ہونے والے 3000 لوگوں میں سے زخمیوں کو علاج کے لئے جنوبی مغربی یونان صوبے کے ایک ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق جھڑپ کے دوران کچھ گولے چینی سرحد پر گرے جس میں کم از کم ایک چینی شہری زخمی ہو گیا۔ تین مسلح جماعتوں نے میانمار کے شمال مشرقی صوبے شان کے سرحدی شہر میوج اور کٹکی میں ایک کے بعد ایک سیکورٹی چوکیوں پر حملے کئے جس میں فوج کے جوان اور سویلین مارے گئے ہیں۔
وزارت دفاع نے بھی کل بیان جاری کرکے واقعہ کی تصدیق کی اور کہا کہ چین کی فوج ہائی الرٹ پر ہے اور ملک کی خود مختاری اور سلامتی کے لئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے گی ساتھ ہی سرحد پر رہنے والے اپنے شہریوں کی جان مال کی حفاظت کا بھی پورا خیال رکھے گی۔ غور طلب ہے کہ شان صوبے میں فوج اور نسلی گروپوں کے درمیان کئی دہائیوں سے جاری جدوجہد میں ہزاروں کی تعداد میں لوگ اس جگہ سے فرار ہو گئے ہیں اور بڑی تعداد میں لوگوں نے چین میں پناہ لے رکھی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Myanmar nationals on china myanmar border flee home to escape in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply