مدینہ منورہ میں خود کش دھماکے کی ہر طرف سے مذمت

ریاض: مدینہ منورہ میں حرم شریف کے قریب خود کش دھماکہ کی عالمی سطح پر مذمت کی جارہی ہے اور ہر طرف سے سعودی حکام کو ٹیلی فون کر کے اس مذموم کارروائی پر شدید صدمہ ظاہر کیا جارہا ہے۔
بحرین، قطر، کویت، متحدہ عرب امارات، عمان اور مصر نے مسجد نبوی، القطیف اور جدہ بم دھماکوں کی شدت سے مذمت کی۔ کونسل آف سینیئر علما نے جدہ اور القطیف کے بعدمسجد نبوی میں بھی ناکام دہشت گردانہ حملہ کو بزدلانہ کارروائی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ ان حملوں نے اس امر ی تصدیق کر دی ہے کہ یہ لوگ مذہب سے بھٹکے اور اسلامی تعلیمات سے عاری اور بے ضمیر لوگ ہیں اور ان کے دلوں میں کسی مقدس مقام کی تقدیس و عظمت نہیں ہے۔
ولیعہد شہزادہ محمد بن نائف کو، جو نائب وزیر اعظم اور وزیر داخلہ بھی ہیں، بحرین کے شاہ حماد بن عیسیٰ الخلیفہ اور بحرین و کویت کے وزراءداخلہ نے فون کر کے اس قابل مذمت فعل کی دل کھول کر مذمت کی
۔ اپنی جانب اور حرمین شریفین کے ائمہ، خطبائ، علما و مشائخ کی جانب سے حرمین شریفین کے متولی شیخ ڈاکٹر عبد الرحمٰن السدیس نے مسجد نبوی، القطیف کی ایک مسجد کے قریب اور جدہ میں ایک کار پارکنگ میں وقوع پذیر ان تکلیف دہ واقعات کی شدت سے مذمت کی ۔
انہوں نے امت مسلمہ کے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ قرآن و سنت پر عمل کریں اور خود کوانتہا پسندی سے دور رکھیں۔ اعلیٰ مجلس عدلیہ کے سکریٹری جنرل اور ترجمان شیخ سلمان بن محمد النشوان نے ان تینوں وارداتوں کی پر زور مذمت کرتے ہوئے انہیں مذموم اور تباہ کن دہشت گردانہ کارروائیوں سے تعبیر کیا۔
عرب لیگ کے سکریٹری جنرل احمد عبد الغیث نے بھی ان دھماکوں کی مذمت کی۔مصر کے مفتی اعظم شو کی ابراہیم نے بھی مقدس ترین مقام مسجد نبوی میں ہوئے دھماکہ کی سخت مذمت کی ۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Muslim scholars condemn terror acts in kingdom in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply