ٹیکساس میں نماز فجر ادا کرنے جارہے ڈاکٹرپر نقاب پوشوں کا حملہ،شدید زخمی

ٹکساس:امریکہ میں ٹکساس صوبہ کے ہوسٹن شہر میں نماز فجر ادا کرنے کے لیے جانے والے ایک مسلم ڈاکٹر کو ایک مسجد کے باہر تین نامعلوم حملہ آوروں نے خنجر گھونپنے کے بعد گولی مار کر شدید زخمی کردیا۔
بلائر کے قریب واقع مدرسہ اسلامیہ مسجد نور کے ترجمان محمد امام الدین اور عینی شاہدین نے مقامی خبر رساں ایجنسیوں کو بتایا کہ حملہ کا نشانہ بننے والا شخص ایک ڈاکٹر تھا اور وہ گلی کے باہر ہی اپنی کار کھڑی کر کے فجر کی نماز کے لیے مسجد کی جانب بڑھ ہی رہا تھا کہ تین نقاب پوش حملہ آوروں نے چھرا مار کر زخمی کر دیاپھر ان تین میں سے ایک نے بندوق نکالی اور گولی بھی مار دی۔
تینوں حملہ آور فوراً ہی جائے واردات سے فرار ہو گئے۔ ہوسٹن کے پولیس افسر مظفر صدیقی نے بھی اس کی تصدیق کرے ہوئے کہا کہصبح تقریباً ساڑھے پانچ بجے ڈاکٹر تجمل اپنی گاڑی کھڑی کرکے مدرسہ اسلامیہ مسجد کی جانب جا رہے تھے کہ تبھی اچانک پیچھے سے کچھ نقاب پوش افراد نے ان پر حملہ کردیا اور فرار ہوگئے۔
مسٹر صدیقی نے رائٹر کو فون پر بتایا کہ اب تک حملہ آوروں کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔ ابتدائی جانچ میں یہ سامنے آ رہا ہے کہ حملے کی وجہ لوٹ پاٹ بھی ہوسکتی ہے ۔
کونسل آن امریکن۔اسلامک ریلیشن (سی اے آئی آر) کی ہیوسٹن شاخ کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر مصطفی کیرل نے بتایا کہ آنکھوں کے امراض کے ماہر ڈاکٹر ارسلان تجمل آئی سی یو میں داخل ہیں اور ان کا علاج چل رہا ہے۔ (رائٹر)

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Muslim doctor shot and stabbed outside mosque in texas in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply