سری لنکا کے تین گاؤں چٹانیں گرنے سے دفن ہو گئے، 200 سے زیادہ خاندان لاپتہ

کولمبو: کئی روز سے جاری موسلا دھار بارش کے باعث سری لنکا میں بڑے پیمانے پر چٹانیں پھسلنے سے 3گاؤں دفن ہو گئے ،جس میں 200 سے زائد خاندان لاپتہ ہیں۔سری لنکا کی ریڈ کراس نے بتایا کہ ارنا یاکے میں ابھی تک 13لاشیں پائی گئی ہیں۔خراب موسم کی وجہ سے ہلاک شدگان کی تعدا میں اضافہ ہو سکتا ہے۔
ایک دیگر رپورٹ کے مطابق لنکا میں چٹانیں گرنے سے کم از کم150افراد کی ہلاکت کا خدشہ ہے۔کئی روز سے جاری بارش کے سبب 1لاکھ37ہزار سے زیادہ افراد نقل مکانی کرنے پر مجبور ہو چکے ہیں اور سری لنکا کے مختلف مقامات پر درجنوں افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔فوج نے بچاو¿ اور راحت کا کام شروع کر دیا ہے اور کشتیوں اور ہیلی کاپٹروں کی مدد سے ساحلی ضلع پوٹالم میں پھنسے200 سے زائدافراد کو بچانے کی کوشش کی جارہی ہے۔
سری لنکا کے دارالخلافہ کولمبو میں سیلابی سڑکوں اور گرے درختوں کی وجہ سے زبردست جام لگ گیا ہے اور ریلوے لائنوں کے پانی میں ڈوب جانے کے باعث ٹرینوں کو روک دیا گیا ہے۔
دریں اثنا کابینہ نے ضرورت پڑنے پر اخراجات کے لیے سوشل سروس محکمہ کو 150ملین روپے جاری کر دیے۔ وزیر برائے ڈزاسٹر منجمنٹ ارورا یاپا نے کہا کہ ہر مکان مالک کو جس کا پورا مکان ڈہہ گیا یا جزوی نقصان پہنچا ہے تعمیراتی یا مرمت کاکام کرانے کے لیے فنڈ دیا جائے گا۔

Title: more than 200 families missing after sri lanka landslide | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply