شام میں بی بی زینب کے روضہ کے قریب خود کش حملے،150سے زائد ہلاک

سیدہ زینب: ایک جانب جہاں امریکہ اور روس شام میں جنگ بندی کے لیے کوششوں میں لگے ہیں وہیں دوسری طرف دولت اسلامیہ فی العراق و الشام(داعش) کا خونیں کھیل جاری ہے اور اتوار کو اس کے خود کش بمباروں نے قومی دارالخلافہ دمشق کے مضافات میں ایک شیعہ زیارت گاہ کے قریب اور حمص میں مختلف مقامات پر تسلسل سے حملے کر کے 150سے زائد افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔داعش نے ان خود کش حملوں کی ذمہ داری قبول کر لی۔شامی نگراں بیورو برائے حقوق انسانی کے مطابق دمشق کے مضافات میں ایک کار بم دھماکہ ہوا جس کے بعد حضرت زینب ؓ کے مزار شریف کے قریب تسلسل سے دو دھماکے ہوئے ۔جس میں 96افراد ہلاک ہو گئے۔شام کی سرکاری خبر ایجنسی ثنا نے پولس ذرائع کے حوالے سے کہا کہ اس میں178افراد زخمی بھی ہوئے۔جن میں بچے بھی شامل ہیں۔حمص میں بھی دو کار بم دھماکے ہوئے جن میں 59افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔یہ دونوں کار بم دھماکے حمص کے وسطی شہر الزہرہ میں ہوئے۔داعش نے اس کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا کہ اس کے دو خود کش بمباروں نے سیدہ زینب کے روضہ کے قریب اور دو بمباروں نے حمص میں بھیڑ میں گھس کر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: More than 150 people killed in is blasts in syria as us russia push truce in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply