دلائی لامہ کو دوبارہ منگولیا آنے کی اجازت نہیں دی جائے گی: منگولیائی وزیر خارجہ

النبٹور:تبتی مذہبی رہنما دلائی لامہ کومنگولیا کے دورے پر آنے کی اجازت دینے کے باعث چین کی ناراضگی کے بعد منگولیا نے کہا ہے کہ وہ تبتی مذہبی رہنما کو دوبارہ ملک کے دورے پر آنے کی اجازت نہیں دے گا۔ منگولیا کے وزیر خارجہ سیند مکھ اورگل نے ایک مقامی روزنامے سے کہا ”دلائی لامہ کو مذہبی مقصد کے لئے بھی ملک کے دورے پر آنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔“ منگولیا کی وزارت خارجہ نے وزیر خارجہ کے اس بیان کی تصدیق کی ۔ چین نے منگولیا کے اس فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین منگولیا کے الفاظ میں یقین رکھتا ہے۔چینی وزارت خارجہ کے ترجمان ہوا چنینگ نے کہا کہ چین منگولیائی وزیر کے بیان کو اہمیت دیتا ہے اور امید کرتا ہے کہ وہ اپنے موقف اور وعدے پر قائم رہے گا۔ اس سے پہلے منگولیا نے کہا تھا کہ دلائی لامہ کی آمد سے حکومت کا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ انہیں منگولیائی بدھ مت پیروکاروں نے دعوت دی ہے۔واضح رہے کہ چین اس سے پہلے بھی دلائی لامہ کی دیگر ممالک میں دوروں کی مخالفت کرتا رہا ہے۔ وہ انہیں ایک علیحدگی پسند رہنما مانتا ہے۔ 1959 میں چین سے ملک بدری کے بعد سے دلائی لامہ تبت کی خود مختاری کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mongolia to not allow dalai lama to visit again in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply