افغانستان میں دو اجتماعی قبروں میں36 سر بریدہ لاشیں پائی گئیں

مزار شریف: افغان پولس نے شمالی صوبہ سر پل کے مرزا اولانگ گاؤں میں اجتماعی قبر دریافت کی ہے جن میں کم از کم 36 افراد کی لاشیں دفن پائی گئیں۔صوبائی حکومت کے ترجمان ذبیح اللہ عمانی نے آج بتایا کہ مرزا اولانگ گاؤں میں دو اجتماعی قبریں دریافت کی گئی ہیں، جن میں سے ایک میں 28 لاشیں ملی ہیں اور دوسری میں آٹھ لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔ زیادہ تر لاشیں سربریدہ ہیں۔ تمام ہلاک شدگان مرد ہیں جن میں آٹھ سے 15 سال کی عمر کے تین لوگ بھی شامل ہیں۔ واضح رہے کہ مرزا اولانگ میں گزشتہ ہفتے دہشت گردانہ حملے میں کم از کم 62 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔
ان میں سے زیادہ تر لوگوں کے سر کاٹ کر ہلاک کیا گیا تھا۔ ترجمان نے بتایا کہ ان دو قبروں کے علاوہ تیسری قبر کا بھی پتہ چلا ہے لیکن وہ طالبان کے مقبوضہ علاقے میں ہے۔ سکیورٹی فورس مزید ایسی قبروں کی تلاش کر رہی ہے۔ مقامی لوگوں نے آج حملے میں مارے گئے لوگوں کی اجتماعی نماز جنازہ پڑھی ۔ اولانگ سے فرار ہونے میں کامیاب ہونے والے عینی شاہدین نے بتایا کہ انہوں نے حملہ آوروں کے ہاتھ میں طالبان کے سفید اور داعش کا سیاہ پرچم دیکھا ہے۔ جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ یہ قتل طالبان اور داعش نے مل کر کیے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mass graves found after afghanistan forces recapture shia village from isis taliban in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply