ذاکر نائیک کو ملیشیا سے نہیں نکالا جائے گا،وہ مستقل اقامتی ہیں : وزیر اعظم مآثر محمد

کوالالمپور: حکومت ہند کے اس اعلان کے ایک روز بعد کہ متنازعہ مبلغ دین اسلام ذاکر نائیک کی حوالگی کی اس کی درخواست پر ملیشیا کی حکومت سرگرمی سے غور کر رہی ہے ملیشیا کے وزیر اعظم مآثر محمد نے کہا کہ ذاکر نائیک کو ہندوستان کے حوالے نہیں کیا جائے گا۔

جمعہ کے روز ایک پریس کانفرنس میں مآثر محمد نے کہا کہ چونکہ مسٹر نائیک پی آر (مستقل سکونت) کا درجہ دیا جا چکا ہے اس لیے انہیں ملک سے نہیں نکالا جا سکتا ہاں اگر وہ یہاں کوئی پریشانی کھڑی کرتے ہیں یا درد سر بنتے ہیں تبھی انہیں ملک چھوڑ کر جانے کہا جا سکتا ہے۔

نائیک پر مختلف الزامات ہیں جن میں اپنی اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کے توسط سے منی لانڈرنگ اور منافرت پھیلانے والی تقریرکا الزام بھی شامل ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے کہا کہ ہم نے ملیشیا میں مقیم ایک ہندوستانی ذاکر نائیک کی حوالگی کی درخواست کی ہے ۔اور یہ درخواست ملیشیا کے ساتھ حوالگی معاہدے کے تحت کی گئی ہے۔

اس مرحلہ میں صرف یہی کہہ سکتا ہوں کہ ہماری درخواست پر ملیشیائی حکومت بڑی سنجیدگی سے غور کر رہی ہے۔2016میں قومی تحقیقاتی ایجنسی نے متلف مذاہب کے درمیان منافرت پھیلانے کے الزام میں ذاکر نائیک کے خلاف انسداد دہشت گردی کے تحت ایک معاملہ درج کیا تھا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Malaysia will not deport zakir naik to india in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply