ذاکر نائیک کی حوالگی کے لیے حکومت ہند ملیشیا سے باقاعدہ درخواست کرے:ہندو رائٹس ایکشن فورس

کولالمپور: ہندو رائٹس ایکشن فورس (ہندراف) کے چیرمین پی ویتھا مورتھی نے حکومت ہند کو تلقین کی ہے کہ اگر متنازعہ مبلغ اسلام ڈاکٹر ذاکر نائیک واقعتاً اسے مطلوب ہے تو وہ ان کی حوالگی کے لیے حکومت ملیشیا سے باقاعدہ درخواست کرے ۔
انہوں نے مزید کہا کہ قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) کہہ چکی ہے کہ وہ یہ علم ہوتے ہی کہ وہ ملیشیا یا سعودی عرب میں اقامت پذیر ہیں وہ یہاں کی حکومتوں سے ان کی حوالگی کی درخواست کرے گی۔
یہ معلوم کیے جانے پر کہ کیا وہ وثوق سے کہہ سکتے ہیں کہ ڈاکٹر نائیک ملیشیا میں ہی ہیں،مورتھی نے کہا کہ وہ یقین سے نہیں کہہ سکتے۔لیکن انہوں نے سنا ہے کہ ذاکر نائیک پتراجیہ یا سائبر جایا میں کسی اپارٹمنٹ میں مقیم ہیں۔
مورتھی نے کہا کہ وہ نائیک کی حوالگی کے مطالبہ میں مورتھی اور 19دیگر کیجانب سے دائر مقدمہ میں فریق بننے کے لیے ہندوستان کے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔
وہ یقیناً ایسا فریق ہے جو عدالت میں مقدمہ پر کافی روشنی ڈال سکتے ہیں۔ واضح رہے کہ مورتھی اور دیگر19افراد نے ڈاکٹر نائیک کو پناہ دینے پر مارچ میں حکومت ملیشیا کے خلاف نالش کی تھی۔عذر داری مین عدالت سے یہ بھی استدعا کی گئی تھی کہ وہ یہ حکم جاری کرے کہ نائیک کو ملیشیا کے لیے ایک خطرہ سمجھا جائے۔

Title: make formal application to extradite naik waytha tells india | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply