آسٹریا میں گرفتار پاکستانی پر پیرس اور ممبئی دہشت گردانہ حملوں میں ملوث ہونے کا شبہ

ویانا: آسٹریائی حکام نے کہا ہے کہ وہ سالسبرگ میں گرفتار مشتبہ پاکستانی کے گذشتہ سال نومبر میں پیرس اور8سال پہلے نومبر میں ہی ممبئی دہشت گردانہ حملوں سے ممکنہ تعلق ہونے کی تحقیقات کر رہے ہیں۔ سالسبرگ میں پرایکیوٹرز نے کہا کہ اس جانب نشاندہی کرنے والے سراغوں کی تحقیقات کی جارہی ہے۔یہ34سالہ پاکستانی دسمبر میں ایک الجیریائی کے ساتھ آسٹریا میں گرفتار کیا گیا تھا۔
تاہم مغربی آسٹریا میں گذشتہ سال دسمبر میں گرفتار کیے گئے اس پاکستانی مشتبہ کی شناخت کی تصدیق نہیں ہوئی ہے۔پرازیکیوٹرز نے ایک تفصیلی بیان میں یہ بھی کہا کہ دیگر معاملات کے علاوہ اس معاملہ کی بھی بڑی گہرائی و گیرائی سے تفتیش کی جارہی ہے ۔پیرس میں ایک ذریعہ اور سنڈے ٹائمز نے کہا کہ اس شخص کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ وہ کالعدم تنظیموں لشکر طیبہ اور لشکر جھنگوی کے لیے بم بنانے کا کام کرتا ہے۔ہندوستان ممبئی حملوں کا، جس میں 166بشمول کئی غیر ملکی ہلاک ہوئے تھے، لشکر طیبہ کوذمہ دار ٹہراتا ہے۔لشکر جھنگوی پر الزام ہے کہ حالیہ برسوں میں کئی بڑے حملوں میں اس کا ہاتھ ہے۔
فرانسیسی تفتیش کاروں کا شبہ ہے کہ دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) نے ، جس نے پیرس بم دھماکوں اور 22مارچ کو بروسلز دہشت گردانہ حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے، ان دونوں کو دہشت گردانہ حملے کرنے کے لیے یورپ کے سفر پر روانہ کیا ہوگا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Link between paris and mumbai attacks under probe in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply