لندن کی مسجد میں”احمدیوں کو ہلاک کرو “ عنوان والے پمفلٹ پائے گئے

لندن:بی بی سی ایک رپورٹ کے مطابق جنوبی لندن کی ایک مسجد میں احمدیوں کو قتل کرنے کی تلقین کرنے والے دو ورقیوں کا ایک بڑا ذخیرہ پایا گیا۔ختم نبوت کے ایک سابق رہنما کی جانب سے انگریزی میں لکھے دو ورقیہ میں کہا گیا ہے کہ جب تک وہ لوگ تائب نہ ہوجائیں اور دائرہ اسلام میں مکمل طور پر داخل نہ ہوجائیں انہیں سزائے موت دی جاتی رہے۔
انٹرنیشنل بزنس ٹائمز کے مطابق اسی قسم کے پمفلٹ گذشتہ کئی سالوں سے مختلف مواقع ، پروگراموں اور مقامات پر پائے جاتے رہے ہیں۔بی بی سی کے مطابق ختم نبوت نے خیراتی کمیشن کے دستاویز میں اسٹاک ویل گرین مسجد کو اپنا دفتر دکھایا ہوا ہے۔ اور اسے اس نے اپنی ویب سائٹ پر بیرون ملک دفتر کے طور پر دکھا رکھا ہے۔بی بی سی کے ذریعہ رابطہ کیے جانے پر مسجد کے ایک ٹرسٹی طٰحہٰ قریشی نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ ٹرسٹ نے اس قسم کے کوئی پمفلٹ شائع نہیں کیے۔
نہ ہی اس کا ہماری مسجد سے کوئی تعلق ہے ۔ ضرور یہ کسی کی شرارت ہے جس نے ناپاک ارادوں سے یہ پرچے یہاں لاکر رکھے ہیں۔اسی مسجد پر2011میں پاکستان میں دہشت پھیلانے کا الزام لگایا جا چکا ہے۔

Title: leaflets calling for death of ahmadis found in london mosque | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply