خامنہ ای نے ایران کے اقتصادی بحران کا ذمہ دار صدر حسن روحانی کو ٹہرایا

لندن : ایران کے رہبر اعظم آیت اللہ علی خامنہ ای نے ملک کی اقتصادیات کی بدترین صورت حال پر شدید احتجاج کی شکل میںعوامی غصہ پھوٹ پڑنے کے بعد صدر حسن روحانی حکومت کو کساد بازاری کا ذمہ دار ٹہرایا۔

آیت اللہ خامنہ ای کا بیان ریال کی گرتی قدر پر عوام خصہ کو ٹھنڈا کرنے کی کوشش ہے۔ واضح ہو کہ ایران پر نئی اور مزید سخت امریکی پابندیوں کے باعث ایران کی اقتصادی حالت نہایت خستہ ہو گئی ،اشیائے خوردنی کے بھاؤ آسمان سے باتیں کرنے لگے۔ ملازمتیں ختم ہونے لگیں اور سرکاری کرپشن بڑھنے لگا۔

نتیجہ میں اپریل سے اب تک ایران کی کرنسی کی قدر گھٹ کر آدھی رہ گئی۔جس کے خلاف احتجاج میں ہزاروں ایرانی سڑکوں پر اتر آئے۔خامنہ ای نے کہا کہ پابندیوں سے اتنا اثر نہیں پڑا ہے ۔بلکہ اقتصادی بد نظمی کے باعث عام ایرانیوں پر دباؤ بڑھ گیا ۔

انہوں نے کہا کہ وہ اسے دھوکہنہیں کہیں گے ۔ہاں انتظامیہ میں فاش غلطی ہوئی ہے۔خامنہ ای نے صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ کے2015کے جوہری معاہدے سے نکل جانے اور پھر گذشتہ ہفتہ پابندیوں کے دوبارہ نفاذ کے بعد ایرانی رہنما نے امریکہ سے کسی بھی قسم کے مذاکرات خارج از امکان بتائے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Khamenei blames rouhani for economic crisis in iran in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply