افغان فوج کی کارروائی میں کنگارو عدالت کا سربراہ سمیت 22طالبان انتہاپسند ہلاک

کابل: افغانستان کے جنوبی صبہ قندھار میں افغان فوجیوں کی معاونت کے طور پر کیے گئے کائنیٹک فضائی حملہ میں کم از کم21طالبان انتہاپسند ہلاک ہو گئے۔

فوجی ذرائع کے مطابق جمعہ کے روز قندھار کے خاک ریز علاقہ میں تعینات افغان قومی فوج کے سپاہیوں کے دفاع میں ایک کائنیٹک حملہ کیا گیا جس میں21طالبان انتہاپسند ہلاک اور ایک زخمی ہو گیا۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ ہلمند صوبہ کے نہر سراج ڈسٹرکٹ میں بھی ایک فضائی کارروائی کی گئی جس میں 3طالبان جنگجو ہلاک ہو گئے۔

علاوہ ازیں وزارت داخلہ کے بیان کے مطابق غور صوبہ میںافغان اسپیشل فورسز کی کارروائی میں طالبان کا ایک سینیئر لیڈر جو کنگارو عدالت کا سربراہ تھا ہلاک ہو گیا۔

یہ کارروائی افغان نیشنل پولس کی اسپیشل فورسز اور اسپیشل ایر بریگیڈ نے مشترکہ طور پر کی۔اس سے قبل جمعرات کو جنوبی ہلمند صوبہ کے دارالخلافہ لشکر گاہ میں ایک ہلاکت خیز کار بم دھماکہ کی سازش ناکام بنا دی گئی۔

وزارت داخلہ سے جاری بیان میں کہاگیا کہ یہ کار بم ندائے علی ڈسٹرکٹ کی حدود میں کے گئے فضائی حملہ میں ناکارہ ہو گیا۔بیان میں مزید بتایا گیا کہ انتہاپسند لشکر گاہ شہر مین یہ کار بم دھماکہ کرنا چاہتے تھے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kangaroo court head among 22 militants killed in afghanistan in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.