سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد اسرائیلی پولس نے فلسطینیوں کی ملکیت والی زمین سے یہودیوں کو بے دخل کر دیا

اوفرا(مغربی کنارہ): اسرائیلی پولس نے اسرائیل مقبوضہ مغربی کنارے میں فلسطینی باشندوں کی ملکیت والی زمین پر غیر قانونی طور پر تعمیر کی گئی تین عمارتوں کو اسرائیلیوں سے خالی کرا کے وہاں مظاہرہ اور احتجاج کرر ہے آباد کاروں اور ان کے سیکڑوں حامیوں کو ہٹانا شروع کر دیا۔پولس نے کارروائی کرتے ہوئے کچھ آباد کاروں کو زبردستی نکالا اور کچھ خود ہی نکل پڑے۔
اسرائیل سپریم کورٹ نے فلسطینیوں کی جانب سے یہ ثبوت پیش کیے جانےکے بعد کہ جس زمین پر اسرائلیوں کے مکانات تعمیر کیے گئے ہیں وہ زمین ان کی ملکیت ہے فیصلہ سنایا کہ یہ3ہزار سے زائد نفوس پر مشتمل آبادی والے علاقہ میں واقع یہ 9عمارتیں ڈھا دی جائیں ۔اس قسم عدالتی احکام سے جس سے فلسطینیوں کا حق ملکیت تسلیم کیا جاتا ہے، اسرائیل کے دایاں بازو عناصر کی بھنویں تن گئی ہیں کیونکہ وہ وہ مقبوضہ خطہ میں جسے فلسطینی ایک ریاست قرار دلوانا چاہتے ہیں، بستیوں میں تعمیرات میں توسیع کے منصوبوں کو فروغ دینا چاہتے ہیں۔

Title: jewish landgrabbers evicted from private palestinian land | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply