جاپان نے امریکی بیڑے کو تحفظ بہم پہنچانے کے لیے اپنا سب سے بڑا جنگی بیڑہ روانہ کر دیا

ٹوکیو:جاپان نے اپنے فوجی کردار میں وسعت دینے کے حوالے سے متنازعہ قانون کی منظوری کے بعد پہلا توسیعی فوجی اقدام کرتے ہوئے اپنا سب سے بڑا جنگی بیڑہ جاپانی سمندر میں چھوڑ دیا۔ ہلی کاپٹر بردار ایزومو نام کا یہ جنگی بحری بیڑہ دراصل امریکہ کا سامان رسد لانے والے جہاز اور جنگی بیڑے کارل ونسن کو تحفظ بہم پہنچانے کے لیے بھیجا گیا ہے۔اس بحری جہاز پر جاپانی نیوی کے9 ہیلی کاپٹر بھی موجود ہیں۔جاپانی میڈیا کے مطابق ایزموو جاپان کا سب سے بڑا بحری جہاز ہے۔یہ بحری جہاز جاپان کی یوکو سوکا بندرگاہ سے روانہ ہوا ہے۔
جاپان کی پارلیمنٹ نے کچھ عرصہ قبل ایک قانون منظور کیا تھا جس میں جاپان کے فوجی کردار کو وسعت دینے کے بارے میں وضاحت کی گئی تھی ،اسی قانون کا سہارا لیتے ہوئے جاپان نے اپنے عسکری مفادات کے پیش نظر بحری بیڑہ روانہ کیا ہے۔واضح رہے کہ اس سے پہلے امریکہ نے بھی اپنا کارل ونسن نامی بحری جہاز کوریا کی جانب روانہ کیا تھا اور اب جاپان بھی امریکہ کے نقش قدم پر چل پڑا ہے جس کی وجہ سے کشیدگی مزید بڑھنے کا امکان ہے۔کیونکہ شمالی وکریا نے دھمکی دی ہے کہ وہ خطہ میں موجود امریکی طیارہ بردار جہازوں کے بیڑے کارل ونسن اور ایک امریکی آبدوز کو غرق کر دے گا۔

Title: japan sends its biggest warship to protect us supply vessel and aircraft carl vinson | In Category: دنیا  ( world )
Tags: , ,

Leave a Reply