داعش نے قاہرہ بم دھماکے کے ذمہ دارابو عبداللہ المصری کاویڈیو جاری کیا

قاہرہ: دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) نے اتوار کو ایک ویڈیو جاری کیا ہے جس میں ایک شخص گذشتہ سال دسمبر میں قاہرہ واقع قبطی چرچ بم دھماکے کے لئے خود کو ذمہ دار بتا رہا ہے۔ ویڈیو میں نقاب پوش شخص جنگی لباس میں ہے جس کی شناخت ابو عبداللہ المصری کے طور پر کی جا رہی ہے۔ وہ اس ویڈیو میں دنیا کے تمام دہشت گردوں کی حوصلہ افزائی کر رہا ہے اور مصر کی جیل میں بند دہشت گردوں کو جلد ہی رہا کرا لئے جانے کا وعدہ کر رہا ہے۔
مصری صدرعبدالفتاح السیسی نے پہلے ہی اس 22 سالہ حملہ آور طالب علم کی شناخت محمود شفیق کے طور پر کی تھی۔ ایسا خیال کیا ہے کہ اسی طالب علم نے اپنا نام تبدیل کرکے ابو عبداللہ المصری رکھا ہے۔ وہ سال 2014 میں اطلس میں داعشمیں شامل ہونے سے پہلے دو ماہ تک جیل میں قیدتھا۔ اس ویڈیو میں یہ شخص کہتا ہے جیلوں میں بند میرے بھائیو ں آپ لوگ خوش رہیں، آپ لوگ مجھ پر یقین کریں۔ آپ کو پریشان یا غمزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ میں قسم کھاتا ہوں کہہم لوگ جلد قاہرہ کو آزاد کریں گے او رآپ لوگوں کو بھی قید سے آزاد کرایا جائے گا۔ میں آپ سے وعدہ کرتا ہوں کہ آپ لوگ خوشی سے زندگی گذاریں گے۔واضح رہے کہ گذشتہ سال دسمبر میں سنت مارکس کیتھیڈرل چرچ کے قریب کئے گئے حملے میں کم از کم 28 لوگوں کی موت ہو گئی تھی جس میں زیادہ ترخواتین اور بچے ہلاک ہوئے تھے۔

Title: isis video claims to feature cairo church bomber | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply