امریکی ڈرون حملہ میں داعش کا وزیر جنگ شیشانی ہلاک

واشنگٹن: امریکی افسران کے مطابق ایسا خیال کیا جاتا ہے کہ شام میں امریکی ڈرون حملہ میں دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کا ابو عمر الشیشانی نام کا ایک کمانڈر جسے پنٹاگون داعش کے وزیر جنگ سے تعبیر کرتا ہے،مارا گیا۔
اس کمانڈر کی ہلاکت کو داعش کی قیادت کو لنگڑا لولہ کر دینے کی امریکی کوشش میں ایک زبردست کامیابی سمجھا جا رہا ہے۔ ابو عمر الشیشانی کے سرپر، جسے شیشان کے عمر کا لقب ملا ہوا تھا اور جو امریکہ کو انتہائی مطلوب انتہا پسندوں میں سے ایک تھا ، امریکہ نے5ملین ڈالر انعام کا اعلان کر رکھا تھا ۔الشیشانی 1986میں جارجیا میں، جب وہ سوویت یونین کی ایک ریاست تھا، پیدا ہوا تھا ۔
سرخ رنگت کی ڈاڑھی والا شیشانی داعش کے لیدر ابو بکر البغدادی کا نہایت قریبی فوجی مشیر تھا۔اور ابو بکر البغدادی بھی شیشیانی پر زبردست انحصار کرتے تھے۔اس حملہ میں پائلٹ اور بے پائلٹ دونوں طیاروں نے شام میں الشدادی میں شیشانی کے ٹھکانے کو نشانہ بنایا ۔پنٹاگون کا خیال ہے کہ امریکی حمایت سے شامی عرب اتحادی فوج کے ہاتھوں زبردست ہزیمت اٹھانے اور اپنے ہاتھوں سے الشدادی کے نکل جانے کے باعث داعش کی پست حوصلگی دور کرنے کے لیے ششانی کو وہاں بھیجا گیا تھا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Isis commander abu omar al shishani likely killed in us air strike in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply