داعش نے بلوچستان سے اغوا کیے گئے چین کے دونوں مدرسین کو ہلاک کرنے کی ذمہ داری قبولی

قاہرہ: خونخوار بین الاقوامی دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش)) نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے پاکستان کے صوبہ بلوچستان سے گزشتہ ماہ اغوا شدہ چین کے دونوں شہریوں کو،جو تدریسی شعبہ سے تعلق رکھتے تھے، ہلاک کردیا ہے۔ داعش کی خبر رساں ایجنسی عماقنے ایک بیان جاری کرکے کہا ہے کہ بلوچستان کے کوئٹہ سے اس سال 24 مئی کو چین کے جن دو شہریوں کو اغوا کیا گیا تھا انہیں ہلاک کر دیا گیا ہے۔ اس دوران صوبے کے سرکاری ترجمان نے کہا ہے یہ پتہ لگایا جا رہا ہے کہ دہشت گرد تنظیم کے اس بیان میں کتنی سچائی ہے۔فی الحال پاکستان کی وزارت خارجہ یا وزارت داخلہ سے آئی ایس کے اس دعوے کے سلسلے میں کوئی بیان نہیں آیا ہے۔
تاہم ۔ چین نے آئی ایس کے اس بیان پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے وہ حقیقت کا پتہ لگا رہا ہے۔ چین نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ گذشتہ کچھ دنوں سے اساتذہ کی رہائی کی کوشش میں لگا ہوا تھا۔ آئی ایس کے اس بیان سے پاکستان میں چین کے شہریوں کی تحفظ کی کوششوں کو جھٹکا لگا ہے۔ چین کی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستانی حکام اور دیگر ذرائع سے حقیقت کا پتہ لگایا جا رہا ہے۔ اس نے کہا “چین دہشت گردی کے کسی بھی شکل کی زوردار مخالفت کرتا ہے۔” پاکستان کے چین میں سفیر اور دیگر حکام نے پاکستان سے بار بار زور دیا ہے کہ وہ اپنے ملک خاص طور پر بلوچستان کی سیکورٹی کو مزید پختہ کرے جہاں وہ نئے بندرگاہ کی تعمیر کر رہا ہے اور اپنے مغربی علاقوں کو بحیرہ عرب سے جوڑنے کے لئے شاہراہوں کی تعمیر کر رہا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Isis claims to kill chinese couple studying and teaching in pakistan in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply