داعش نے جرمنی ٹرین پر کلہاڑی حملے وخنجر زنی کی ذمہ داری قبول کرلی

دبئی:دولت اسلامیہ فی العراق والشام (داعش) نےجرمنی کی ٹرین پرحملے کی ذمہ داری قبول کر لی اور کہا کہ یہ حملہ اس کے فدائین دستہ کے رکن نے ،جو جرمنی میں افغان پناہ گزین کے طور پر مقیم تھا کیا۔
یہ خبر داعش سے وابستہ خبررساں ایجنسی نے دی ہے۔ ایجنسی کا کہنا ہے کہ جرمنی میں حملے کا منصوبہ داعش کا تھا اور اس نے پہلے ہی فیصلہ کیا تھا کہ اس پر حملہ کرنے والوں کو جواب دیا جائے گا۔
یاد رہے کہ منگل کو ہی جنوبی جرمنی میں ایک سترہ سالہ افغان لڑکے نے، جو پناہ گزیں تھا، ایک ٹرین میں گھس کر نعرہ تکبیر اللہ اکبر لگاتے ہوئے مسافروں پر کلہاڑی اور چاقوسے حملہ کر کے کئی مسافروں کو شدید زخمی کر دیا تھا۔
اس نے پولس کے آتے ہی فرار ہونے کی کوشش کی۔ پولس نے اسے رکنے کے للکارا تو بھی وہ نہ رکا جس پر پولس نے گولی چلا کر اس کا کام تمام کر دیا۔
باویریا شہر کے داخلی امور کے انچارج جواکھم ہرمین نے سرکاری ٹیلی ویزن اے آر ڈی سے اس امر کی تصدیق کر دی کہ حملہ آور کو پولیس نے مار گرایا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ باویریا کے اوسوین فورٹ شہر میں رہتا تھا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Isis claims responsibility for ax attack on german train in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply