داعش نے ٹرمپ کی غیر متوقع جیت کو ہی اب اپنا ہتھیار بنانے کا فیصلہ کیا ہے:افغان داعش کمانڈرخراسانی

کابل: انتہا پسند تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام(داعش)نے نو منتخب امریکی صدر ڈونیلڈ ٹرمپ کے خلاف مغربی نوجوانوں کو میدان جنگ میں اتارنے کے لئے ٹرمپ کی حیران کن جیت کو ہی پروپیگنڈا کے طور پر استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس فیصلے کے تحت داعش مغربی نوجوانوں کو بھرتی کرکے نئے امریکی صدر کے خلاف ایک نیا محاذ کھولنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔
ٹرمپ نے اپنی صدارتی مہم کے دوران مسلمانوں کے خلاف اپنی تقریروں میں نسلی عصبیت کا اظہار کیا تھا۔ رائٹر سے گفتگو کرتے ہوئے افغانستان میں داعش کے کمانڈربو عمر خراسانی نے کہا کہ ’ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنی صدارتی مہم کے دوران مسلمانوں کے خلاف کھلے عام زہر افشانی کرکے ہمارا کام مزید آسان کردیا ہے، اب داعش ٹرمپ کی تعصب پرستانہ تقریروں اور حیران کن جیت کو ہی ڈونیلڈ ٹرمپ کے خلاف استعمال کرے گی‘۔
داعش کماندار کا کہنا تھا کہ ڈونیلڈ ٹرمپ نے اپنی تقریروں کے دوران سرعام مسلم انتہا پسندوں کو تنقید کا نشانہ بنایا اور لوگوں سے شدت پسندوں کو شکست دینے کے وعدے بھی کیے مگر بنیاد پرست جنگجو اس سرد جنگ میں فتح حاصل کریں گے‘۔
داعش کمانڈر کا مزید کہنا تھا کہ ٹرمپ نے اپنی صدارتی مہم کے دوران امریکا میں مسلمانوں کی آمد پر مکمل پابندی کا اعلان کیا تھا اور ان کے اسی اعلان کو بنیاد بنا کر ہم مغربی نوجوانوں کو داعش میں بھرتی کرکے ٹرمپ کے خلاف میدان میں اتاریں گے۔افغان طالبان کے ایک سینیئر کماندار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ٹرمپ کی مسلم مخالف تقریروں اور تعصب پر مبنی مہم کو بنیاد بنا کر جنگجو گروپ امریکا کو طویل جنگ کے منہ میں دھکیل دیں گے اگر ٹرمپ نے اپنی مہم کے دوران مسلم مخالف منصوبوں کو اب تکمیل تک پہچانے کی کوشش کی تو مسلم امت بھی جنگجوو¿ں کے ساتھ ہوجائے گی۔
داعش، القاعدہ اور طالبان جیسی جنگجو تنظیموں کی جانب سے ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف نئے محاذ کھولنے کے اعلان اور مغربی نوجوانوں کو بھرتی کرکے ٹرمپ کے خلاف میدان میں اتارے جانے کے اعلانات پر تاحال ٹرمپ آفس کی جانب سے کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا گیا۔ دوسری طرف امریکی انتخابات میں جیت کے بعد ڈونالڈ ٹرمپ کی تعصبانہ گفتگو میں بھی کمی واقع ہوئی ہے۔
واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی صدارتی مہم کے دوران امریکا میں مسلمانوں کی مکمل پابندی کے اعلان کے ساتھ ساتھ انتہاپسندی میں ملوث تارکین وطن کو بھی ملک بدر کرنے کا اعلان کیا تھا۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر ڈونلڈ ٹرمپ نے تعصبانہ گفتگو اور تقریریں جاری رکھیں تو شدت پسند تنظیمیں ٹرمپ کی تقریروں کو ہی ان کے خلاف استعمال کرکے اپنی طاقت میں اضافہ کریں گی۔ویسے بھی صدارتی مہم کے دوران ٹرمپ کی تقریروں نے انتہا پسندوںکے لیے ایندھن کا کام کیا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Isis and taliban ready to use trump win to expand their ranks in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply