ترکی کے ایک شادی خانہ میں ایک بچے کو خود کش بمبار بنا کر بھیجا گیا تھا، ہلاک شدگان کی تعداد51 ہو گئی

استنبول: ترکی کے جنوبی غزنی ٹیپ شہر میں شادی کی تقریب کے دوران ایک زبردست خود کش طفل بم دھماکے میںکم ازکم 51افراد ہلاک اور متعدد دیگر زخمی ہو گئے۔ صدر رجب طیب اردغان نے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے اس واقعہ کے پس پشت دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (آئی ایس آئی ایل) جس کا عربی میں مخفف داعش ہے، کے دہشت گردوں کا ذہن کارفرما ہونے کا شبہ ظاہر کیا ہے۔
مسٹر اردغان نے بتایا کہ شادی کی تقریب پر حملہ کرنے والا خودکش حملہ آور ایک لڑکا تھا جس کی عمر 12 سے 14 سال کے درمیان تھی۔ ایک مقامی اہلکار نے بتایا کہ کرد حامی پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے ایک رکن کی شادی کی تقریب میں ہوئے اس دھماکے میں دولہا دولہن بھی زخمی ہوئے ہیں۔ یہ دھماکہ ایسے وقت ہوا جب شادی کی تقریب اختتام پذیر ہونے ہی والی تھی اور دولہا و دلہن شادی خانہ سے روانہ ہونے ہی والے تھے۔
شادی میں شامل مہمان زیادہ تر سرت اور وان کے رہائشی تھے اور وہ الوداعی رقص کر رہے تھے کہ رقص کے دوران ہی ایک زور دار دھماکہ ہوا۔جس بچے نے یہ خود کش دھماکہ کیا وہ مہمان کے بھیس میں شادی خانہ میں داخل ہوا تھااور رقص کرنے والوں میں شامل ہو گیا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Isil uses child bomber in attack that killed 51 in se turkey in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags:

Leave a Reply