فلوجہ فتح کرنے کے بعد عراقی فوجوں کی موصل کی جانب پیش قدمی

بغداد: عراقی فوجوں نے فلوجہ کو دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے تسلط سے آزاد کرنے کے بعد اب موصل میں داعش کے گڑھ پر آر پار کی جنگ کے ارادے سے چڑھائی کرنے کی تیاریاں شروع کر دی ہیں۔
سیکورٹی ذرائعکے مطابق موصل کو داعش کے قبضہ سے بازیاب کرانے کے لیے امریکی قیادت والے اتحاد کے فضائی حملوں کے سائے میں انسداد دہشت گردی دستے اور دو فوجی ڈویژن شمالی ریافائنر ی سے ایک ایر فیلڈ کی جانب کوچ کر گئے۔
موصل عراق کا سب سے بڑا شمالی شہر ہے اور داعش کا باوقاعدہ دارالخلافہ ہے۔ سرکاری فوجیں دو دیہات کو داعش کے انتہا پسندوں سے پاک کرتے ہوئے بائیجی کے مغربی ریگستانی راستے سے 20کلومیٹر اندر تک داخل ہوگئیں۔
وزیر دفاع خالد العبیدی نے کہا کہ یہ حملہ داعش کو بائیجی س کے شمال میں115کلومیٹر کے فاصلہ پر واقع قیارہ شہرسے مار بھگانے کے لیے شروع کی گئی کارروائی کا آغاز ہے۔ جہاں ایک ایر فیلڈ یہاں سے مزید60کلومیٹر کی دوری پر واقع موصل پر چڑھائی کرنے کے لیے معاونت کر سکتا ہے۔
عبیدی نے ٹوئیٹر پر کہا کہ قیارہ کو داعش کے چنگل سے چھڑانے کے لیے شروع کی جانے والی اس کارروائی سے داعش کے دہشت گردوں کو جائے پناہ نہیں ملے گی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: iraqi military opens second front on daesh in mosul in Urdu | In Category: دنیا  ( world ) Urdu News

Leave a Reply