رمضان المبارک سے پہلے ہی موصل کو داعش کے چنگل سے چھڑا لیا جائے گا:عراقی فوجی سربراہ

بغداد:عراقی فوج کے سربراہ عثمان الغنیمی نے دعویٰ کیا ہے کہ ماہ رمضان المبارک سے پہلے ہی دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے زیر تسلط شہر موصل کو بازیاب کرا لیا جائے گا۔واضح رہے کہ داعش نے کچھ عرصہ قبل ملک کے جنگی نوعیت سے سب سے اہم شہر موصل سمیت عراق کے ایک بڑے حصہ پر قبضہ کر لیا تھا۔
عراقی سیکیورٹی فورسز نے بہت سے علاقے تو واپس لے لیے ہیں اب صرف موصل کا کچھ علاقہ باقی ہے۔ الغنیمی نے ایک بیان میں بتایا کہ ہم ماہ رمضان المبارک سے قبل ہی موصل کو ان دہشت گردوں سے چھڑا لیں گے اور ان کا نام و نشان مٹا دیں گے۔برطانوی چینل سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عراقی فورسز نے بڑی دلیری سے داعش کو ایک مخصوص علاقے میں دھکیل دیا ہے اور ہم امیدوار ہیں کہ ہم رمضان سے پہلے داعش کا عراق سے مکمل صفایا کر دیں گے۔
انہوں نے مزید کہا کہ فوج کی ریپڈ ریسپونس فورسز نے داعشی انتہا پسندوں سے ایسے علاقے میں لڑائی جاری رکھی ہوئی ہے کہ جہاں ساڑھے چار لاکھ لوگ محصور ہیں۔اقوام متحدہ کے اعداد و شمار کے مطابق موصل میں اب تک تقریبا آٹھ ہزار لوگ مارے جا چکے ہیں لیکن عراقی فوج نے فوجی ہلاکتوں کی تفصیلات فراہم نہیں کیں۔عراقی حکام کے مطابق موصل سے اب تک چھے لاکھ بیس ہزار افراد نے نقل مکانی کی ہے ان میں کچھ مہاجرین نے کیمپ میں پناہ لی ہوئی ہے اور بہت سارے لوگ دوسرے شہروں میں اپنے رشتہ داروں کے پاس پناہ لیے ہوئے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Iraqi army chief vows liberation of west mosul from daesh terrorists by may 27 in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply