ایٹمی معاہدہ توڑنے کی امریکہ کو بھاری قیمت چکانا پڑے گی

نیو یارک:ایران کے صدر حسن روحانی نے خبردار کیا ہے کہ اگر ڈونلڈ ٹرمپ نے عالمی طاقتوں کے ساتھ طے پانے والے جوہری معاہدے کو ختم کیا تو امریکا کو اس کی بھاری قیمت چکانی پڑے گی۔ حسن روحانی نے کہا ہے کہ ہمارے حقوق پامال کرنے والوں کو بھرپور جواب دیاجائے گا، جوہری معاہدہ خطے اور دنیا کی تاریخ میں زندہ رہیگا۔
اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت کے لیے نیویارک پہنچنے کے بعد امریکی ٹی وی کو انٹرویو میں ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایران سے ہونے والے جوہری معاہدے سے علیحدہ ہونا امریکا کے لیے نقصان دہ ثابت ہو گا۔ایرانی صدر نے کہا کہ ایران کے عوام نے دنیا پر ثابت کر دیا ہے کہ وہ اپنے وعدوں پر قائم ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ جوہری معاہدہ کوئی دوطرفہ سمجھوتہ نہیں بلکہ یہ کئی فریقی سمجھوتہ ہے، جس کی تصدیق اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے بھی ہوئی ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ جوہری معاہدے سے نکلنے کا مقصد معاہدے کو سبوتاڑکرنا ہے، جو کسی کیلئے باعث فخر بات نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا اگر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے ایران اور چھ عالمی طاقتوں کے درمیان ہونے والے جوہری معاہدے سے انحراف کیا تو اس اقدام سے عالمی برادری کا امریکا سے بھروسہ اٹھ جائے گا۔
امریکا نے 2015کے جوہری معاہدے میں شامل ایران پر گزشتہ ہفتے عائد پابندیوں میں نرمی برقرار رکھی تاہم رواں سال اکتوبر میں امریکی صدر طے کریں گے کہ آیا ایران کو اس معاہدے میں رکھنا ہے یا جوہری معاہدہ ختم کرنا ہے، واضح رہے امریکی صدر ٹرمپ اس جوہری معاہدے کو پہلے ہی ناکام کہہ چکے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Iranian president hassan rouhani warns us would pay high cost for scrapping nuclear deal in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply