ایران کے فوجی سربراہ کا ترک صدر اردوغان و فوجی افسران بالا سے اہم امور پر تبادلہ خیال

انقرہ:ایرانی مسلح افواج کے سربراہ جنرل حسین باقری نے یہاں ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان، وزیر دفاع فکری ایشیق اور اپنے ترک ہم منصب جنرل ھلوسی آکارسے ملاقات کی۔اس اہم ملاقات میں دو طرفہ تعاون سمیت باہمی دلچسپی کے امور پرسیر حاصل تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے دوران جنرل حسین باقری نے کہا ہے کہ ایران اور ترکی کے درمیان قدیم زمانے سے گہرے ثقافتی، تاریخی اور جغرافیائی تعلقات ہیں جبکہ دونوں ممالک کی سرحدیں ایک دوسرے کے لئے دوستی اور امن و امان کا کردار ادا کر رہی ہیں۔
ایرانی مسلح افواج کے سربراہ کا مزید کہنا ہے کہ دیگر ممالک بالخصوص ہمسایہ ممالک کی ارضی سالمیت کے احترام اور اندرونی معاملات میں مداخلت سے گریز خطے میں امن و امان اور سلامتی کی ضمانت ہے۔ ملاقات میں ترک وزیر دفاع نے کہا کہ ایران کے اعلی سطحی فوجی وفد کے ترکی کے دورے سے دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ تعاون اور دو طرفہ تعلقات کو مزید فروغ دینے میں معاون ثابت ہوگا ۔
ان رہنماؤں نے جن امور پر ہمہ پہلو تبادلہ خیال کیا ان میں تعلیم اور دفاعی تعلقات پر خصوصی زور دیتے ہوئے اطلاعات کے تبادلے،طلبا کے تبادلے اورمشترکہ فوجی تربیتی مشقون پر بھی بات کی گئی۔جنرل باقری کے اس دورے کو ایرانی۔ترک تعلقات کی تاریخ میں نہایت غیر معمولی و اقعہ سے تعبیر کیا جارہا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Iranian military chief meets turkish president in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply