ایران میں ماہر ماحولیا ت کاؤس سید امامی کی جیل میں خود کشی کی تحقیقات کی جائے:حسن روحانی

تہران: صدر ایران حسن روحانی نے حکم جاری کیا ہے کہ جیل میں قید63سالہ ماہر ماحولیات کاؤس سید امامی کی مبینہ خودکشی کی تحقیقات کی جائے۔امام صادق یونیورسٹی میں پروفیسر اور پرشئین وائلڈ لائف ہیریٹیج فاؤنڈیشن کے بانی سید امامی کے گھر والوں کو سنیچر کے روز ہی مطلع کر دیا گیا تھا کہ پروفیسر نے جیل میں خود کشی کرلی ہے۔
عدلیہ کے ایک افسر نے کہا کہ امامی نے جاسوسی کے حوالے سے اعتراف جرم کر لیا تھا۔اس کی وائلڈ لائف این جی او کے سات دیگر ارکان ابھی تک جیل میں ہی ہیں۔ ان کی موت کی خبر کا سن کر چار اکیڈمک سوسائٹیز نے صدر روحانی کو مکتوب ارسال کیا کہ ڈاکٹر کاؤس کی موت کی خبر نے ایران کی سائنسی برادری اور ماحولیاتی کارکنوں کو ہکا بکا کر دیا۔
مکتوب میں کہا گیا ہے کہ وہ ایک معروف پروفیسر،ایک ماہر سائنسداںاور ممتاز فوجی ہونے کے ساتھ ساتھ نہایت شریف النفس، منکسر المزاج اور حسن اخلاق کا پیکر تھے۔ان کی گرفتاری اور موت کے حوالے سے خبریں ناقابل یقین ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Iranian academics demand answers over death of jailed activist in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply