یورپی ممالک جوہری معاہدے میں تبدیلی یا نظر ثانی کا خیال بھی دل میں نہ لائیں: ایران کے رہبر اعظم خامنہ ای کا انتباہ

انقرہ: ایران نے کہا ہے کہ عالمی طاقتوں کے ساتھ اس کے2015کے جوہری معاہدہ میں تبدیلی کا امریکی مطالبہ ہر گز منظور نہیں ہے اور نہ ہی وہ اس پر کوئی بات کرنا چاہتا ہے۔ جبکہ اس معاہدے میں ترمیم کرنے کے لیے امریکیصدرڈونالڈ ٹرمپ کی یورپی ملکوں کو دی گئی مہلت ختم ہونے میں محض ایک ہفتہ باقی ہے۔ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے یو ٹیوب پر ڈالے گئے ایک صوتی پیغام میں کہا ہے کہ برسوں پہلے جو طے ہو چکا ہے اور جس پر عمل آوری بھی ہو چکی ہے ایران اس میں ذرہ برابر ترمیم کرے گا نہ کرنے دے گا۔ابھی تک برطانیہ ، فرانس اور جرمنی اس معاہدے کے پابند رہے لیکن اب وہ امریکہ کو اس معاہدے میں برقرار رکھنے کے لیے ایران کے بالسٹک میزائل پروگرام،2025 میں معاہدے کی کلیدی دفعات کے بے اثر ہوجانے کے بعد اس کی ایٹمی سرگرمیوں اور مشرق وسطیٰ مثلاً یمن اور شام میں اس کے رول پر مذاکرات شروع کرنا چاہتے ہیں۔ایران کے رہبر اعظم آیت اللہ علی خامنہ ای نے بھی جمعرات کو یورپی ملکوں کو انتباہ دیاکہ وہ ایٹمی معاہدے پر ،جس کے تحت ایران نے یورینیم کی افزودگی کا عمل محدود کیا اور جواب میں بڑی پابندیاں ختم کرائیں،نظر ثانی کا خیال تک دل میں نہ لائیں۔ واضح رہے کہ ایران نے ان خدشات اور اندیشوں کو ،کہ ایران ایٹم بم بنا سکتا ہے، دور کرنے کے لیے یورینیم مقوی بنانے کا کام محدود کیا ہے۔ علی اکبر ولایتی کے حوالے سے حکومتی ٹیلی ویژن نے کہا ہے کہ اگر امریکی اتحادی خاص طور پر یورپی ممالک نے معاہدے پر نظر ثانی پر اصرار کیا یاکوشش کی تو ایران کے پاس ایک متبادل یہ بھی ہے کہ وہ خود ہی معاہدے سے باہر ہوجائے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: iran says will not renegotiate nuclear deal warns against changes in Urdu | In Category: دنیا  ( world ) Urdu News

Leave a Reply