ہندوستان کی نیوکلیئر سپلائیر گروپ میں شمولیت جنوب ایشیا میں نہ ختم ہونے والی ایٹمی دوڑ شروع کر دے گی

واشنگٹن: امریکی سینیٹ کے ایک اہم رکن ایڈی مارکی نے انتباہ دیا ہے کہ اگرہندوستان کو جوہری سپلائر گروپ (این ایس جی) میں شامل کرنے سے جنوب ایشیا میں ایک نہ ختم ہونے والی ایٹمی دوڑ شروع ہو جائے گی۔
این ایس جی ایک کثیر قومی تنظیم ہے جس کا کام جوہری توسیع میں کمی لانے کے لیے حساس مواد کے تحفظ ، دوبارہ منتقلی اور برآمد پر نظر رکھنا ہے۔سنیٹر مارکی نے امریکی نائب وزیر خارجہ برائے امور جنوب ایشیا نشا بسوال کو متنبہ کیاکہ آپ کو کچھ کر رہی ہیں وہ عمل کے ردعمل کے زمرے میں آتا ہے اور اس سے ایک ایسی نہ ختم ہونے والی جوہری دوڑ شروع ہوجائے گی کہ الحفیظ و الاماں۔
اور اس کا بالآخر نتیجہ یہ نکلے گا کہ ایٹمی اسلحہ بشمول میدان جنگ میں کام آنے والے ایتمی ہتھیار تیار کیے جانے لگیں گے۔ منگل کی شام امریکہ ہند تعلقات کے حوالے سے سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے اجلاس کے دوران سنیٹر مارکی نے امریکی حکام کو یاددہانی کرائی کہ ہندوستان کو این ایس جی میں شامل کرانے میں مدد کرنے کی اوبامہ انتظامیہ کی پالیسی خطرناک اور غیر ضروری ہے۔

Title: india joining nsg will escalate nuclear race in south asia us senator | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply