آئس لینڈ کے وزیر اعظم پنامہ لیکس کا پہلا شکار بنے

لندن:غیر ملکوں میں خفیہ طور پرکمپنیاں اور اثاثے رکھنے والوں کو بے نقاب کرنے والی پنامہ دستاویزات کے منظر عام پر آتے ہی آئس لینڈ کے وزیر اعظم اس کا پہلا شکار بن گئے۔ وزیر اعظم سگمندور ڈیوڈ گنا لوسگن کے مستعفی ہونے کے بعد پروگریسیوپارٹی کے نائب قائد سیگور در اینگی جوہنانسن نے الیکٹرانک میڈیا پر راست نشریہ میں کہا کہ وزیر اعظم نے اپنی پارلیمانی پارٹی کے اراکین کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم کے طور پر مستعفی ہو رہے ہیں اور وہ(نائب قائد) ان کی جگہ وزیراعظم کا عہدہ سنبھال رہے ہیں۔
11.5ملین افشا دستاویزات میں بے نقاب ہونے والے لا تعداد عالمی سیاسی و سماجی رہنماو¿ں میں وزیر اعظم سگمندور اس اسکینڈل کا شکار بننے والی پہلی بڑی عالمی سیاسی شخصیت ہیں۔یاد رہے کہ پنامہ لیکس میں 140 ایسے سیاسی رہنماو¿ں کے نام لیے گئے ہیں جن کے غیر ملکوں میں اثاثے اور کمپنیاں ہیں۔ان میں 12موجودہ و سابق سربراہان ریاست و مملکت بھی شامل ہیں۔اس افشا کے بعد سے ہی وزیر اعظم سگمندور زبردست دباو¿ میں تھے۔
اگرچہ انہوں نے بیرون ملک منقولہ و غیر منقولہ کسی بھی قسم کے اثاثے رکھنے کے الزام کی تردید کی لیکن ان کی حکومت پر دباو¿ بڑھتا ہی گیا ۔ گلی کوچوں میں احتجاج میں انڈے پھینکے اور مارے جانے لگے۔اورمنگل کو ایک انوکھے احتجاج کا اعلان کیا گیا لیکن وہ احتجاج ہونے سے پہلے ہی وزیر اعظم نے استعفیٰ دے کر پارٹی پر آئی بلا ٹال دی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Iceland pm becomes first victim of panama papers leaks in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply