ایران معاہدے کی تمام شقوں کا احترام کر رہا ہے:عالمی جوہری توانائی ادارے نے مکررتوثیق کی

ویانا:جوہری توانائی کے عالمی ادارے آئی اے ای اے نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ ایران اور 5 عالمی طاقتوں پلس ون کے درمیان طے پانے والے جامع ایٹمی معاہدے کی تمام شقوں کی پابندی کر رہا ہے۔
واضح رہے کہ اس معاہدے کے نفاذ کے بعدآئی اے ای اے کی جان سے جاری کی جانے والی نویں رپورٹ ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایران اب تک معاہدے کے تمام شقوں پر پابندی کے ساتھ عمل کر رہا ہے۔
جوہری توانائی کے عالمی ادارے آئی اے ای اے کی جانب سے پیش کی جانے والی اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پانچ نومبر تک ایران میں کم افزودہ یورینیم کا ذخیرہ جامع ایٹمی معاہدے میں مقرر کی جانے والی سطح سے کہیں کم ہے جبکہ ایران میں یورینیم کی افزودگی کی شرح ایٹمی معاہدے میں مقرر کی گئی شرح سے زیادہ نہیں بڑھی ہے۔
آئی اے ای اے کے سربراہ یوکیا امانو نے اس رپورٹ میں اس بات کی بھی تصدیق کی ہے کہ ایران نے آئی اے ای اے کو یورینیم کی افزودگی کے عمل کی الیکٹرانک نگرانی کی بھی اجازت دے رکھی ہے تاکہ اس کے ذریعے ایٹمی سرگرمیوں کی معلومات معائنہ کاروں کو ملتی رہیں اور ان کا خود کار طریقے سے ریکارڈ کرنے کے علاوہ فیلڈ میں نصب کنٹرول کے دیگرآلات سے حاصل ہونے والی معلومات کے ساتھ موازنہ کیا جا سکے۔
ٰیہان یہ بات قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے اس ا مرکو تسلیم کرنے سے انکار کے بعد کہ ایران معاہدے پر من و عن عمل کر رہا ہے،ایجنسی کی یہ پہلی رپورٹ ہے۔

Title: iaea confirms iran is meeting its commitments under nuclear agreement | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply