اٹلی اور ہنگری کے حکام نے بھیانک بس حادثہ کی مشترکہ تحقیقات شروع کر دی

بڈاپسٹ:اٹلی اور ہنگری کے حکام نے شمالی اٹلی کے ویرونا شہر میں جمعہ کی رات ہوئے ایک بس حادثہ کی وجوہات کا پتہ لگانے کے لئے تحقیقات شروع کر دی ہے۔ ہنگری کے وزیر خارجہ پیٹر ججارتو نے کہا کہ اٹلی میں ویرونا شہر کے قریب ہوئے بس حادثے کی تحقیقات چل رہی ہے اور اس میں اس کی تصدیق ہوئی تھی کہ اس بس میں مجموعی طور پر 56 افراد سوار تھے جس میں ہنگری کے بھی طلبا تھے۔
لیکن اس حادثے کے متعدد ہلاک شدگان کی شناخت نہیں ہو پائی ہے کیونکہ ان میں سے کئی بری طرح جل گئے تھے۔ مسٹر ججارتو نے کہا کہ اٹلی کے حکام نے ویرونا پہنچے بچوں کے والدین کا ڈی این اے کا نمونہ لے لیا ہے جس سے ہلاک شدگان کی شناخت ہو پائے گی۔ انہوں نے کہا شدید زخمیوں میں بھی6افرادکی حالت نازک ہے اور ان کی بھی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔ ایک اور زخمی شخص 60 فیصد جھلس گیا ہے۔
واضح رہے کہ اٹلی کے شمالی شہر ویرونا کے قریب واقع ایک ہائی وے پر جمعہ کی رات کو ہنگری کے طالب علموں کو لے کر آ رہی ایک بس کے گر کر تباہ ہونے سے 16 لوگوں کی موت ہو گئی تھی۔ تمام مسافر فرانس سے واپس آ رہے تھے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Hungarian and italian authorities begin investigations into deadly bus accident in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply