ہانگ کانگ میں3 جمہوریت حامی طلبا مجرم قرار دیے گئے

ہانگ کانگ: ہانگ کانگ کی ایک عدالت نے 2014 میں جمہوریت کی حمایت میں ہوئے مظاہروں کے دوران ملک میں عدم استحکام پیدا کرنے کے الزام میں تین طالب علم لیڈروں کو قصوروار ٹھہرایا ہے۔
عدالت نے جوشووا یونگ اور ایلکس چو کو غیر قانونی طور پر جمع ہونے کا قصور وار پایا جب کہ ناتھن لا کو لوگوں کو ہانگ کانگ حکومت کی عمارت کے احاطے کے باہر مظاہرہ کرنے کے لئے اکسانے کا قصور وار پایا۔
عدالت نے وونگ کو اکسانے کا قصور وار نہیں پایا۔ قصور وار پائے گئے طلبہ نے کہا کہ انہوں نے ابھی تک عدالت کے فیصلے کو کسی دیگر عدالت میں چیلنج کرنے پر غور نہیں کیا ہے۔
اس معاملے میں باضابطہ فیصلہ پندرہ اگست کو آئے گا۔یہ احتجاج79روز تک جاری رہا تھا جسے کئی عشروں کے دوران چینی کمیونسٹ پارٹی کے لیے سب سے بڑا چینلج کے طور پر دیکھا جا رہا تھا۔
ان طلبا کو مجرم قرار دینے سے یہ خدشہ ہوگیا ہے کہ اگر انہیں طلبا کو سزا سنائی گئی اور جیل بھیجا گیا تو احتجاجات پھر شروع ہو سکتے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Hong kong students convicted for pro democracy protests in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply