عراقی فوج کا عملاً تلعفرپر قبضہ ، کئی علاقوں میں عراق کا پرچم لہرا دیا

بغداد:عراقی فوج نے، جو اس وقت دولت اسلامیہ فی العراق و الشام کے آخری ٹھکانے شمالی صوبہ نینیے وا کے تلعفر میں دہشت گردوں کے خلاف بھرپور آپریشن کر رہی ہے ،داعش کے قبضہ سے تلعفر کا اتنا بڑا رقبہ چھڑا لیا ہے کہ یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ عراقی فوج کاتلعفر پر عملاً قبضہ ہو گیا ہے ۔ عراقی فوج کے ذریعہ یہ آپریشن چند روز قبل عراقی وزیراعظم حیدر العبادی کی جانب سے اعلان کے بعد شروع کیا گیا اور عراقی فوج نے چند دنوں میں ہی تلعفر شہر کے بیشتر حصے پر کنٹرول حاصل کیا ہے۔
عراقی فوج کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ فوج نے تلعفر کے 29 علاقوں میں سے 27 علاقوں پر کنٹرول حاصل کرنے کے بعد عراقی پرچم کو نصب کر دیا ہے۔تلعفر کے نواحی علاقوں میں عراقی فوج اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے جہاں عراقی فوج داعش کے باقی ماندہ چند ٹھکانوں کو تباہ کرنے میں مصروف ہے۔ عراقی فوج کے ایک اعلی کمانڈر کا کہنا ہے کہ تلعفر سے دہشت گردوں کے مکمل قلع قمع تک آپریشن جاری رہے گا۔واضح رہے کہ عراق کا شہر تلعفر داعش کے زیر قبضہ آخری علاقہ ہے جبکہ عراقی فوج کی جانب سے تلعفر کا کنٹرول سنبھالنا داعش کے لئے ایک بڑی شکست ہے جس کے بعد داعش کا عراق سے خاتمہ ہو جائے گا ۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Heavy clashes in last pocket of is fighters near tal afar in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply