حکومت دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سنجیدہ ہے تو انیس حقانی کو پھانسی دے:سابق انٹیلی جنس سربراہ

کابل: افغان انٹیلی جنس اور نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکورٹی کے سابق سربراہ رحمت اللہ نبیل نے حکومت سے کہا ہے کہ اگر وہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں واقعتاً سنجیدہ ہے تو وہ جیل میں بند حقانی نیٹ ورک کے لیڈرکے بھائی کو پھانسی دے ۔
قومی دار الخلافہ کابل میں ہلاکت خیز حملہ کے بعد ایک بیان میں انہوںنے کہا کہ اگر حکومت دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سنجیدہ ہے تو وہ سب سے پہلے سراج حقانی کے بھائی انیس حقانی اور متعد دیگر دہشت گردوں کو جنہیں سزائے موت سنائی جا چکی ہے فی الفور پھانسی دی اور انہیں کل تک پھانسی دے دی جانا چاہئے۔ انیس حقانی اپنے بھائی اور حقانی نیٹ ورک کے لیڈر سراج حقانی کا نائب بھی ہے۔
یاد رہے کہ منگل کے روز کابل میں اس علاقہ میں جہاں سیکورٹی اہلکار رہائش پذیر ہیں انتہا پسندوں کے ایک گروپ نے مربوط خود کش حملہ کر دیا تھا جس میں کم ا زکم28افراد ہلاک اور327زخمی ہو گئے تھے۔افغان انٹیلی جنس نے 2014کے اواخر میں حقانی نیٹ ورک کے ایک لیڈر کے ساتھ انیس حقانی کو بھی گرفتار کیا تھا۔
انیس حقانی اور بھائی سراج حقانی،جلال الدین حقانی کے بیٹے عبداللہ اور خوست صوبہ میں اس نیٹ ورک کا معروف کمانڈر حافظ رشید کو14اکتوبر2014کو گرفتار کیا گیا تھا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Hang anas haqqani if serious in fight against terror nabil tells govt in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply