ایران عرب ملکوں کے معاملات میں مداخلت اور حوثیوں کو بالسٹک میزائل کی فراہمی بند کرے:خلیج تعاون کونسل

ریاض :خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) نے بین الاقوامی برادری کو تلقین کی ہے کہ وہ ایران پر دباو ڈالے کہ وہ اقوام متحدہ کے چارٹر کا احترام کرے،سعودی عرب پر حملہ کرنے کے لیے حوثی باغیوں کو بالسٹک میزائل کی فراہمی اور عرب ملکوں کے معاملات میں مداخلت بند کر ے۔

کونسل کے سکریٹری جنرل عبد اللطیف الزیانی نے مزید کہا کہ خلیج تعاون کونسل ممالک مشرق وسطیٰ کو انسانی تباہی کے اسلحہ بشمول ایٹمی ہتھیاروں سے پاک دیکھنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے مزیدکہا کہ ایران لڑکھڑاتی اقتصادیات کے باوجود خطہ میں عدم استحکام کے اپنے وسائل استعمال کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر ایران علاقائی سلامتی چاہتا ہے تو اسے معائنہ کے حوالے سے اپنی ایٹمی فائل کی تکمیل،بالسٹک میزائل کی عدم فراہمی ،اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے احترام اور ہمسایہ ممالک میں عدم مداخلت سمیت کئی تقاضے پورے کرنا ہوں گے۔الزیانی نے یہ بھی کہا کہ یمنی بحران دور کرنے کے لیے خلیج کی مساعی کو عرب، علاقائی اور بین الاقوامی ممالک سے بھرپور حمایت حاصل ہے۔

انہوں نے یمن کے لوگوں کے لیے خادم حرمین شریفین و فرمانروائے سعودی عرب شاہ سلمان بن عبد العزیز آل سعود کی جانب سے کے ایس ریلیف سینٹر کے توسط سے امداد جاری کرنے کا خیرمقدم کیا۔

Title: gcc urges iran to stop destabilizing region | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply