گامبیا کے سابق صدر جامع کا خونخوار سابق انٹیلی جنس سربراہ ین کوبا بڈجی گرفتار

بنجل: مغربی افریقی ملک گامبیا کے حکام نے قتل کے ایک معاملہ میں نیشنل انٹیلی جنس ایجنسی کے سابق سربراہ کو گرفتار کر لیا۔ ایک انسانی حقوق گروپ نے کہا گزشتہ سال دسمبر میں پارلیمانی انتخابات میں شکست کے بعد اپوزیشن کے سابق رہنما یحییٰ جامع کو ملک بدر کردیا گیا اور جامع نے ایکواٹوریل گنی میں جلا وطنی اختیار کر لی۔
جس کے بعد حکومت وقت نے جامع کے ان غنڈوں اور درندہ صفت ساتھیوں کا قلع قمع کرنے کا بیڑہ اٹھا لیا جنہوں نے جامع کے22سالہ دور اقتدار میں ماؤرائے عدالت قتل ، مخالفین کا اغوا اور انہیں اذیتیں دینے جیسے مظالم ڈھائے تھے۔ پولیس ترجمان فوڈے کونٹا نے بتایا کہ ایجنسی کے سابق ڈائریکٹر جنرل یانکوبا باڈگی اور محکمہ کے سابق ڈائریکٹر شیخ عمر جینگ کو کل گرفتار کر لیا گیا۔
مسٹر جامع نے سال 1994 میں بغاوت کے ایک سال بعد اس ادارے کی بنیاد رکھی تھی اور اسے ریاست کا سب سے زیادہ آزاد ادارے کی شکل دی تھی۔ صدر ادمہ بیرو نے گزشتہ دسمبر کو مسٹر جمعہ کو الیکشن میں شکست دی تھی۔مسٹر جامع کی ملک بدری کے بعد کل اس معاملے میں پہلی بار کسی سینئر گامبیائی افسر کی گرفتاری ہوئی ہے۔ گامبیا کی پولیس نے کہا کہ اس ہفتے اب تک 51 افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔

Title: gambia dreaded former spy chief yankuba badjie arrested and held in custody | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply