امریکہ میں اگر کوئی واردات ہوتی ہے تو جج اور عدالتیں ذمہ دار ہوں گی

واشنگٹن:ویزا پابندی معاملے میں عرضی مسترد ہونے سے بوکھلائے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ اگر ملک میں کسی طرح کی کوئی واردات ہوتی ہے تو اس کے لئے جج اور عدالتی نظام ذمہ دار ہوں گے۔ سان فرانسسکو کی عدالت نے اتوار کو سیئٹل کی ضلع عدالت کے اس فیصلے پر روک لگانے سے انکار کر دیا تھا جس میں ذیلی عدالت نے واشنگٹن ریاست کی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے جمعہ کو سات مسلم ممالک کے شہریوں پر عائد ویزا پابندیوں کے ٹرمپ کے سرکاری حکم پر عبوری حکم امتناعی جاری کر دیا تھا۔
مسٹر ٹرمپ نے ٹویٹ کرکے کہا کہ پابندی کو روکنے والی عدالتیں امریکی سرحدوں کو محفوظ کرنے کی راہ میں رکاوٹ بن رہی ہیں۔ جج نے ایسے فیصلے دے کر ملک کو بحران میں ڈال دیا ہے اور اگر کچھ ہوتا ہے تو اس کے لئے جج اور عدالتی نظام کو مجرم ٹھہرایا جائے گا۔ صدر ٹرمپ نے سرحدی سلامتی حکام سے امریکہ میں داخل ہونے والے لوگوں پر کڑی نگرانی رکھنے کے لئے کہا ہے۔ محکمہ انصاف کے پاس پیر کی دوپہر تک اس معاملے میں اپنا موقف پیش کرنے کا وقت ہے۔ محکمہ انصاف کی درخواست مسترد ہونے کے بعد پناہ گزینوں کے امریکہ آنے کا راستہ کھل گیا ہے اور اب وہ آج سے امریکہ آ سکیں گے۔
قبل ازیں نائب صدر مائیک پینس نے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے ایک وفاقی جج پر کی جانے والی نکتہ چینی کا دفاع کیا ہے۔ جج نے سات مسلمان اکثریتی ملکوں سے امریکہ میں داخلے پر عارضی پابندی کے حکم نامے کی بحالی کی درخواست مسترد کر دی ہے۔ اتوار کے روز ’این بی سی‘ کے ’میٹ دِی پریس‘ پروگرام میں بات کرتے ہوئے، پینس نے کہا کہ ٹرمپ نے اپنا اظہارِ خیال برجستہ طور پر کیا ہے، جسے امریکی عوام ہوا کا تازہ جھونکا خیال کرتے ہیں اور صدر کی سوچ سے متفق ہیں ۔ بقول پینس ’امریکی خارجہ پالیسی اور قومی سلامتی کے معاملے پر جج کی جانب سے دیا جانے والا فیصلہ، صدر کی نگاہ میں انتہائی مایوس ک±ن ہے‘۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Furious donald trump says judge who defied him has put us in peril in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply