لیبیائی فوج اور داعش میں تصادم پھر شروع

طرابلس: سرت کے شہر میں واقع سینٹر کانووکیشن ہال پر قبضہ کرکے وہاں سے دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کو بھگانے کے ٹھیک ایک دن بعد لیبیا کی فوج اور داعش کے درمیان نئے سرے سے تصادم شروع ہو گیا ہے۔
امریکہ کی حمایت یافتہ لیبیا حکومت سے منسلک فوج نے بدھ کو شہر میں دہشت گرد گروہ کے تسلط کی علامت کانووکیشن ہال کے علاوہ کئی اہم مقامات پر بھی قبضہ کر لیا تھا۔ وہاں گزشتہ کئی ہفتوں سے جنگ جاری ہے۔
گذشتہ یکم اگست سے امریکہ نے بھی داعش کے خلاف فضائی حملے شروع کر دیا ہے۔ امریکہ کی حمایت یافتہ فوجیوں نے ایک بیان میں کہا کہ انہوں نے داعش سے شمالی افریقہ میں “سب سے اہم گڑھ” کو بھی آزاد کرا لیا تھا۔
لیکن لیبیا کے فوجیوں کو اب بھی سرت کے وسط میں واقع داعش کے کئی ٹھکانوں پر کنٹرول حاصل نہیں ہوا ہے۔ سرت مہم کے ترجمان ریڈا اسسا نے کہا کہ سرت بندرگاہ کے پاس کل ایک ہوٹل اور گیسٹ ہاؤس کی طرف بڑھ رہے فوجیوں کو دہشت گردوں کے ساتھ ہلکی جھڑپ ہوئی۔ فوجیوں کے مطابق انہوں نے ایریا ایک اور تین میں اپنا تسلط قائم کر لیا ہے لیکن دو اضلاع میں اب بھی دہشت گردوں کا قبضہ ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Fresh clashes in sirte between libyan forces daesh in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply