ڈھاکہ ریستوراں حملہ میں مزید چار گرفتار

ڈھاکہ:بنگلہ دیش کے سلامتی دستوں نے ایک ممنوعہ تنظیم کے علاقائی لیڈر سمیت جماعت المجاہدین کے چار ممبران کو ڈھاکہ ریستوران حملہ کے ضمن میں آج گرفتار کیا۔
اس حملے میں 22 افراد ہلاک ہوگئے تھے جن میں بیشتر غیر ملکی تھے۔ سریع الحرکت بٹالین کے ترجمان مرزا نو ر رحمان بھوتیہ نے بتایا ہے کہ بٹالین نے راجدھانی ڈھاکہ کے باہری علاقہ کے ایک مکان پر چھاپہ مارکر جنوبی علاقہ کے ایک لیڈر اور میڈیکل کے طالب علم سمیت تین دیگر افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔
انہوں نے ایک خبررساں ایجنسی کو بتایا ہے کہ ان لوگوں سے ڈھاکہ ریستوران حملہ سے متعلق ان کی کسی بھی شکل میں ملوث ہونے سے متعلق پوچھ تاچھ کی جارہی ہے۔ بھوتیہ نے بتایا کہ ان لوگوں کے گھر میں گولہ بارود ، اسلحہ، بم بنانے کا سامان اور جہادی مطبوعہ لٹریچر پایا گیاجس کا استعمال تربیت کے دوران کیا گیا ہوگا۔
قابل ذکر ہے کہ بنگلہ دیش کے پانچ انتہا پسندوں نے جن میں سے کئی خوشحال اور متمول خاندان سے تعلق رکھتے تھے، یکم جولائی کو سیکورٹی فورسز کے ہاتھوں مارے جانے سے قبل ڈھاکہ کے ایک ریستوراں میں 22 لوگوں کو ہلاک کردیا تھا جن میں اٹلی جاپان ہندوستان اور کچھ دیگر ملکوں کے شہری شامل تھے۔ حملہ کی ذمہ داری دولت اسلامیہ فی العراق والشام (داعش) نے اپنے سر لی تھی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Four more arrested in connection with dhaka terror attack in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply