صحافی خاشقجی کے قتل کے جرم میں پانچ کو سزائے موت کا سامنا،شہزادہ سلمان کا کوئی ہاتھ نہیں:استغاثہ

ریاض: استغاثہ کے مطابق ترکی کے استنبول میں سعودی قونصل خانہ میں واشنگٹن پوسٹ کے کالم نویس جمال خاشق جی کے قتل کے جرم میں11مشتبہ سعودی اہلکاروں میں سے 5 کو سزائے موت دینے کی استدعا کی گئی ہے ۔

استغاثہ نے یہ بھی کہا کہ اس معاملہ میں ولیعہد شہزادہ محمد بن سلمان دور دور تک ملوث نہیں ہیں۔واضح ہو کہ خشقجی کو 2اکتوبر کو استنبول کے سعودی قونصل خانہ میں اس وقت بڑی بے رحمی سے ہلاک کر دای گیا تھا جب وہ اپنی شادی کے لیے قونصل خانے میں اپنے دستاویزات لینے گئے تھے۔

بتایا جاتا ہے کہ انہیں زہریلا انجکشن دیا گیا تھا اور پھر ان کی لاش ٹکڑے ٹکڑے کر کے عمارت سے باہر لےجائی گئی تھی۔

استغاثہ نے کہا کہ اس کے بعد ان کی لاش کے ٹکڑے ایک مقامی ترکی ایجنٹ کو دے دیے گئے تھے ۔اور جس ایجنٹ کو دیے گئے تھے اس کا خاکہ تیار کیا جارہا ہے اور تیار ہونے کے بعد اسے ترک حکام کو سونپ دیا جائے گا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Five saudi officials face death penalty for jamal khashoggimurder in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment